تازہ ترین

’اپنی پارٹی‘ کا ڈی ڈی سی ممبران کے استعفوں پر غور

انتظامیہ بلدیاتی اداروں کو بااختیار بنانے میں ناکام : بخاری

تاریخ    3 اگست 2021 (00 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک
سرینگر//’جموں وکشمیر اپنی پارٹی‘ نے دھمکی دی ہے کہ اِس کے ضلع ترقیاتی کونسل ممبران اپنے استعفے پیش کریں گے کیونکہ یونین ٹیرٹری انتظامیہ کی طرف سے دور دراز علاقوں میں لوگوں کی مدد کیلئے کئے جارہے کاموں میں رکاوٹیں حائل کی جارہی ہیں۔ یوٹی انتظامیہ کو وزیر اعظم نریندر مودی کی طرف سے بلدیاتی اداروں کو بااختیار بنانے کے وعدے کی یا د دہانی کراتے ہوئے اپنی پارٹی سربراہ الطاف بخاری نے کہاکہ اُن کی جماعت کے کونسل ممبران کو یا تو کام کرنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے یا پھر اُن کی نقل وحمل پر مکمل پابندی عائد کی گئی ہے۔ ایک انٹرویو کے دوران بخاری نے کہا’’ہمارے پاس مستعفی ہونے کے علاوہ کوئی چارہ نہیں رہا کیونکہ یوٹی انتظامیہ بار بار ناکام رہی ہے اور دور دراز دیہات میں لوگوں کو راحت پہنچانے کے لئے کام کرنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے، میں لوگوں کو جھوٹے خواب دکھانا نہیں چاہتا‘‘۔ اپنی پارٹی نے ضلع ترقیاتی کونسل کی 280نشستوں میں سے 15نشستوں جبکہ اُس کے حمایت یافتہ امیدواروں نے 21سیٹوں پر کامیابی حاصل کی تھی۔ بعد ازاں دیگر جماعتوں سے دو مزید ممبران بھی اِس میں شامل ہوگئے۔ بخاری نے کہاکہ بدقسمتی سے زمینی سطح پر انہیں بااختیار نہیں بنایاگیااور جو منتخب ہوئے ہیں اُنہیں لگتا ہے کہ اُن کے ساتھ دھوکہ ہوا ہے ، اگر بہتری کے اقدامات نہ لئے گئے تو لوگوں کا پنچایتی راج نظام سے اعتماد اُٹھ جائے گا۔ لہٰذ ا اِس سے قبل کہ ایسا ہو، اِس سے بہتر ہے کہ ہمارے کونسل ممبران لوگوں سے جھوٹے وعدے کرنے کی بجائے گھروں پر بیٹھیں‘‘۔ بخاری نے کہاکہ مجھے یہ کہتے ہوئے افسوس ہورہا ہے کہ زمین پر کوئی ترقی نظر نہیں آرہی ہے جس کا وعدہ وزیر اعظم  نے دفعہ370کی منسوخی کے دن کیاتھا‘‘۔ انہوں نے مزید کہاکہ ’’1990سے مین اسٹریم سیاستدانوں کو مختلف دہشت گرد گروہوں کی طرف سے نشانہ بنایاگیا، ہم آخری بندوق کی خاموشی تک انتظار نہیں کرسکتے ، بجائے اِس کے ہمیں اپنی آواز عوامی رابطہ کے ذریعے زیادہ اہم بنانی ہوگی، ہمیں لوگوں کے لئے کام کرنے کی ضرورت ہے اور یہاں ہم ناکام ہورہے ہیں کیونکہ انتظامیہ کسی کی بھی نہیں سنتی‘‘۔