کورونادورمیں پختہ یقین اورحوصلہ افزائی کے ذریعہ اصلاحات کی گئیں:مودی

تاریخ    25 جون 2021 (00 : 01 AM)   


نئی دہلی// وزیراعظم نریندرمودی نے کہا کورونا دورمیں مرکزاورریاستوں نے تخلیقی شراکت کی بنیادپر اصلاحات کے ذریعہ کورونا وبا کے چیلنجز سے نمٹنے کی کوشش کی۔مسٹرمودی منگل کو اپنا ایک بلاگ پوسٹ لنکڈن پلیٹ فارم پر شیئر کرتے ہوئے یہ بات کہی۔ اپنی اس پوسٹ میں انہوں نے کووڈ دورمیں اصلاحات، مرکز-ریاست کی شراکت داری، تخلیقی پالیسی-تعمیر کے بارے میں تفصیل سے ذکر کیاہے ۔زیراعظم نے نے پوسٹ میں لکھا ہے کہ مرکز اورریاستوں نے کوآپریٹو فیڈرلزم کی ایک بہتر مثال قائم کرکے تخلیقی شراکت نبھاتے ہوئے کورونا بحران سے پیداچیلنجز کاسامنا کیا۔ انہوں نے کہا کہ خودکفیل ہندستان پیکج کے تحت ریاستوں کو اضافی قرض لینے کی اجازت دی گئی اورریاستوں نے اس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ایک لاکھ کروڑ روپے سے زیادہ کا قرض لیا، جس سے وسائل میں نسبتا اضافہ ہوا۔انہوں نے کہا ہے کہ کورونا وبا دنیا بھرکے لئے نیا چیلنج لے کرآئی اورہندستان بھی کوئی مستثنیٰ نہیں تھا۔ انہوں نے کہا کہ اس دوران وسائل جمع کرنا سب سے بڑاچیلنج تھا لیکن ملک میں مرکزاورریاستوں کی حصہ داری سے اس چیلنج کا سامنا کیا گیا۔کورونا کے خلاف مہم میں چار اہم اصلاحات کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ غریب، پسماندہ اور متوسط طبقے کی زندگیوں کو بہتر بنانے پر مبنی تھے ساتھ ہی ان سے مالی استحکام کو مضبوطی ملی۔ پہلی اصلاح ایک ملک ایک راشن کارڈ سے مہاجروں کو بہت فائدہ ہوا اورانہیں کہیں سے بھی راشن لینے کی سہولت ملی۔ دوسری اصلاح کے تحت کاروبار کرنے میں آسانی میں اضافہ کیا گیا، تیسری اصلاح کے تحت پراپرٹی ٹیکس اور پانی وسیور کے چارج سے متعلق نرخوں کونوٹیفائی کیا گیا۔ اس کے تحت شہری علاقوں میں پراپرٹی کی لین دین اور اسٹیمپ ڈیوٹی رہنما اصولوں کو نوٹیفائی کرنے کاالتزام کیا گیا۔ 
 

تازہ ترین