چین کے اعلیٰ ایٹمی سائنسدان کی پراسرار موت

تاریخ    20 جون 2021 (00 : 01 AM)   


یو این آئی
بیجنگ// چین کے اعلیٰ ایٹمی سائنسدان کی پراسرار حالات میں عمارت سے گرکر موت ہوگئی۔ ہاربن انجینئرنگ یونیورسٹی کے نائب صدر اور چینی نیوکلیئر سوسائٹی کے نائب صدر جانگ ڑجیان مردہ پائے گئے۔ ساؤتھ چائنا مارننگ پوسٹ کے مطابق ، یونیورسٹی نے بتایا کہ پولیس نے جائے وقوعہ پر تفتیش میںبہت زیادہ معلومات نہ ملنے کی وجہ سے قتل ہونے سے انکار کیا ہے۔یونیورسٹی نے بتایا کہ ہاربن نے اطلاع دی ہے کہ پروفیسر جانگ ڑجیان کی 17 جون کو صبح 9.34 بجے ایک عمارت سے گرنے کے بعدموت ہوگئی۔جمعہ کے روز جانگ کی موت کے بارے میں اورکوئی سرکا ری بیان نہیں آیا اور ان کا نام جمعہ کو یونیورسٹی کی ویب سائٹ کی قائدانہ فہرست میں بنا رہا۔ ڑانگ یونیورسٹی میں نیوکلیئر سائنس اینڈ ٹکنالوجی کے کالج میں پروفیسر تھے۔ وہ چینی نیوکلیئر سوسائٹی کے نائب صدر بھی رہے۔وہ یونیورسٹی میں کمیونسٹ پارٹی کمیٹی کی اسٹینڈنگ کمیٹی کے ممبر بھی تھے۔ 2019 میں ، محقق کو چین نیوکلیئر کارپوریشن نے جوہری توانائی تخروپن اور حفاظتی تحقیق میں ان کی شراکت کے لئے چین کے جوہری پروگرام کے فادر کے نام پر ، کیان سانقیانگ ٹکنالوجی ایوارڈ سے نوازا تھا۔
 

 

تازہ ترین