فلسطینیوں کے ساتھ دھوکہ | زائد المعیاد ویکسین کی فراہمی

تاریخ    20 جون 2021 (00 : 01 AM)   


یو این آئی
یروشلم //فلسطینی اتھارٹی نے 'زائد المعیادقرار دے کر اسرائیل سے کورونا کی ویکسین لینے کے معاہدے کو منسوخ کردیا۔فلسطینی اتھارٹی کی جانب سے کہا گیا کہ اسرائیل کی جانب سے مغربی کنارے میں فراہم کی جانے والی ویکسین زائد المعیاد ہونے کے قریب ہیں۔فلسطینیوں نے عہدیداروں پر الزام لگایا تھا کہ وہ اسرائیل سے غیر معیاری ویکسین وصول کر رہے ہیں جو وبا میں مؤثر ثابت نہیں ہوگی۔معاہدے کا اعلان کرتے ہوئے اسرائیل نے تاریخ بتائے بغیر کہا تھا کہ ویکسین جلد زائد المعیاد ہوجائیں گی۔فلسطینی اتھارٹی کے وزیر صحت کا کہنا تھا کہ اسرائیلی حکام نے ہمیں بتایا تھا کہ ویکسین کی ایکسپائری ڈیٹ جولائی یا اگست کی ہے جبکہ ایسا نہیں ہے۔ ویکسین موصول ہونے پر ایکسپائری کی میعاد جون کی نکلی۔ لہذا ہم نے ان کو مسترد کردیا ہے۔پی اے کے ترجمان نے بتایا کہ تنظیم نے ویکسین کے معاہدے کو جلد ایکسپائری کی وجہ سے منسوخ کردیا ہے اور تقریبا 90000 خوراکیں اسرائیل کو واپس بھیج دی ہیں۔اسرائیلی وزارت عظمیٰ کے دفتر کی جانب سے ابھی تک مذکورہ معاملے پر کوئی تبصرہ سامنے نہیں آیا ہے۔
 

تازہ ترین