تازہ ترین

ہماری بیٹی کی قدرتی موت نہیں،قتل کیا گیا ہے

گنڈ جہانگیر بانڈی پورہ کے کنبے کا پریس کالونی میں احتجاج

تاریخ    16 جون 2021 (00 : 01 AM)   


سرینگر//بانڈی پورہ کے گنڈجہانگیر حاجن میں گزشتہ دنوں فوت ہوئی ایک خاتون کے میکے والوں نے منگل کو پریس کالونی سرینگرمیں احتجاج کرتے ہوئے شبہ ظاہرکیاکہ تین بچوں کی ماں کی موت قدرتی نہیں ہے بلکہ اُس کوزہردیکر قتل کیاگیا۔کھومنہ بہارآبادحاجن بانڈی پورہ سے پریس کالونی سری نگرآئے مردوزن نے کہا’’ پہلے ہمیں بھی لگاکہ انکی بیٹی کی موت کسی بیماری کی وجہ سے ہوئی ہے لیکن متوفی کاایک اسپتال کارڈ دیکھ کر انہیں یہ شبہ پیداہوا ہے کہ وہ خودقدرتی موت نہیں بلکہ اُسکو قتل کیاگیا ہے‘‘ ۔مذکورہ خاتون کی ماں نے نامہ نگاروں کوبتایاکہ انکی بیٹی کی شادی گنڈجہانگیر کے محمدشفیع شیخ کے ساتھ کئی برس قبل ہوئی تھی اوراُنکے تین بچے بھی ہوئے ۔انہوں نے کہاکہ جب  انکی بیٹی کی موت ہوئی توہمیں لگاتھاکہ یہ قدرتی موت ہے لیکن متوفی خاتون کے بیٹے نے کمرے کی صفائی کے دوران کمیونٹی ہیلتھ سینٹر سمبل کاجاری کردہ ایک اوپی ڈی کارڈ پایا ،جس پرہماری بیٹی کانام لکھاہے،اس کارڈ میں یہ درج ہے کہ خاتون نے کوئی زہریلی شے کھائی تھی یاکہ اُس کوکوئی زہریلی شے دی گئی تھی ۔انہوں نے کہاکہ اسپتال کے کارڈ پرڈاکٹروں نے لکھاہے کہ خاتون کوسرینگرمنتقل کیاجائے لیکن ڈاکٹروں کے مشورے پرعمل کرنے کے بجائے اُن کے داماد نے اپنی بیوی کوگھرواپس لیاجہاں اُسکی موت واقعہ ہوئی ۔ہاتھوں میں پلے کارڈ لئے احتجاجی مردوزن نے مطالبہ کیاکہ متوفی خاتون کی میت کوقبرسے نکال کر اس کاپوسٹ مارٹم کرایاجائے ،کیونکہ انہیں شبہ ہے کہ اُس کوزہردیکر قتل کیاگیاہے ۔