تازہ ترین

جموں کشمیر میں 13ویں روز کورونا کرفیو سخت کیا گیا

وادی میں میوہ یا سبزی فروشوں کو بھی چلنے کی اجازت نہیں دی گئی

تاریخ    13 مئی 2021 (00 : 01 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر//مرکزی زیر انتظام جموں کشمیر کے تمام20اضلاع میں بدھ کو کورونا لاک ڈائون کے13روز سخت ترین بندشوں کے نتیجے میں لوگ گھروں میں محصور ہوئے جس کے نتیجے میں عید کی خریداری نہ ہوسکی۔پولیس نے منگل شام سے ہی سخت ترین بندشوں کو عائد کیا تھا،جبکہ اہم پلوں اور سڑکوں کو خار دار تاروں سے بند کیا گیا تھا۔ کورونا کرفیو میں پہلی مرتبہ پولیس اور فورسز اہلکاروں نے مختلف علاقوں و بستیوں سے نکلنے والے راستوں کو بند کردیا تھا،جس کے نتیجے میں لوگوں کی آمد و رفت ممکن نہ ہوسکی۔شہر سرینگر میں پہلی بار کورونا کرفیو کی صورتحال دیکھنے کو ملی اور کسی بھی سڑک پر کسی بھی شخص یا پرائیویٹ گاڑیوں کو آزادانہ نقل و حرکت کی اجازت نہیں دی گئی۔ صبح سے ہی پرائیویٹ ٹرانسپورٹ کی نقل وحمل بند رہی اور پولیس نے کورونا کرفیو سختی کیساتھ لاگو کردیا۔کہیں سے بھی کسی شخص یا گاڑی کو کو چلنے کی اجازت نہیں دی گئی۔بدھ کی صبح لاک ڈائون اورکوروناکرفیو کے تحت عائد کردہ بندشوں اورپابندیوں کایہ عالم تھاکہ بارہمولہ ،سرینگر شاہراہ اورگرمائی راجدھانی کوجنوبی ووسطی کشمیرکے اضلاع سے ملانے والی شاہراہوں اوربین ضلعی سڑکوں پر ہر تین چار کلو میٹر کے بعدپولیس نے رکائوٹیں کھڑا کی تھیں ،جگہ جگہ خاردار تاریں بچھاکر گاڑیوں کی آمدورفت میں رکائوٹ ڈالی گئی ۔کورونا کرفیو کی سختی کا یہ عالم تھا کہ کہیں پر میوہ یا سبزی فروشوں کو بھی اجازت نہیں دی گئی۔گوشت یا مرغ فروشوں کی دکانیں کھولنا تو بہت دور کی بات ہے۔البتہ بارہمولہ سمیت کئی قصبہ جات میں بدھ کوسہ پہرساڑھے 4بجے سے شام 7دن بجے تک لاک ڈائون نرم کیاگیا۔جموں میں بھی13ویں روز بندشوں کا سلسلہ جاری رہا،جس کے دوران تمام کاروباری مراکز مقفل رہے۔ سڑکوں سے مسافر بردار ٹرانسپورٹ غائب رہا،جبکہ نجی ٹرانسپورٹ جزوی طور پر جاری رہا۔ جموں کے دیگر اضلاع کے علاوہ خطہ چناب اور پیر پنچال میں بھی کرونا کرفیو کی وجہ سے کاروبار  بدستور بند ہے۔ بدھ کو بانہال سے سرینگر تک چلنے والی ریل بھی بندہے۔ اس دوران پولیس نے وادی میں گزشتہ24گھنٹوں کے دوران کرونا سے متعلق میعاری عملیاتی طریقہ کار اور کورونا کرفیو کی خالف ورزی کی پاداش میں92 کیسوں کا اندراج عمل میں لایا گیا،جبکہ145افراد کی گرفتاری عمل میں لائی گئی۔ پولیس نے678افراد  سے ایک لاکھ9ہزار200روپے کی رقم بطور جرمانہ وصول کی۔پولیس نے بڈگام اور کولگام میں15گاڑوں کو بھی ضبط کیا۔پولیس نے ہندوارہ اور گاندربل میں4 دکانداروں کے خلاف بھی کاروائی بھی عمل میں لائی۔