تازہ ترین

دھراٹی پنچایت میں پینے کے صاف پانی کی شدید قلت

واٹر سپلائی ٹینک کی تعمیر میں غیر معیاری مٹریل کے استعمال کا الزام

تاریخ    15 اپریل 2021 (00 : 01 AM)   


جاوید اقبال
 مینڈھر //مینڈھر کی سرحدی پنچایت دھراٹی میں پینے کے صاف پانی کی شد ید قلت پائی جارہی ہے جبکہ مکینوں نے محکمہ آب رسانی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ پانی جمع کرنے کے سلسلہ میں زیر تعمیر ٹینک میں غیر معیاری متریل استعمال کیا گیا ہے ۔مکینوں نے تعمیراتی ایجنسی پر الزا عائد کرتے ہوئے کہاکہ تعمیر ات میں معیاری سامان استعمال ہی نہیں کیا گیا تھا جس کی وجہ سے کچھ ہی وقت میں ٹینک کا چھت منہدم ہو گیا تھا لیکن مذکورہ خبر سوشل میڈیا پر آنے کے بعد ٹھیکیدار و محکمہ کے ملازمین کی ملی بھگت سے چوری چھپے دوبارہ سے لینٹر ڈال دیا گیا تاہم اس میں پھر بھی غیر معیاری ساز و سامان کا استعمال کیا گیا ہے ۔پنچایت کے وارڈ نمبر 3کے پنچایت ممبر محمد یاسیر خان نے بتایا کہ جہاں مذکورہ علاقہ سرحدی کے انتہائی قریب آباد ہے وہائیں راجوری ضلع کے ساتھ بھی اس کی حد جوڑتی ہے ۔انہوں نے بتایا کہ مذکورہ گائوں میں پینے کے صاف پانی کی شدید قلت پائی جارہی ہے جس کی وجہ سے لوگ کئی کلو میٹر کی پیدل مسافت طے کر کے پینے کیلئے پانی لانے پر مجبور ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ متعلقہ محکمہ کی جانب سے تیار کر دہ لفٹ سکیم کے واٹر سپلائی ٹینک میں غیر معیاری ساز وسامان کا استعمال کیا گیا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ ایک بار لینٹر منہدم ہو چکا ہے جبکہ اب دوبارہ سے ڈالا گیا ہے ۔مکینوں و پنچایتی اراکین نے ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ تعمیر ہوئی ٹینک میں استعمال مٹریل کی جانچ کے سلسلہ میں ایک خصوصی ٹیم بھیجی جائے جبکہ عوام کو پانی فراہم کرنے کیلئے ٹھوس اقدامات اٹھائے جائیں ۔