مدرسہ غنیتہ العلوم اخیار پور میں جلسہ ختم بخاری | مفسر قرآن مفتی فیض الوحید نے آخری حدیث کا درس دیا

تاریخ    4 اپریل 2021 (55 : 12 AM)   


اشتیاق ملک
ڈوڈہ //ڈوڈہ ضلع کے مشہور و معروف ادارہ مدرسہ جامعہ غنیتہ العلوم اخیار پور جکیاس میں درس ختم بخاری کے سلسلہ میں ایک مختصر تقریب زیر سرپرستی مہتمم مدرسہ الحاج برہان القادر غنی پوری منعقد ہوئی جو جموں و کشمیر کے معروف اسکالر و مفسر قرآن مفتی فیض الوحید کے دعائیہ کلمات سے اختتام پذیر ہوئی۔ تقریب کے دوران چھ ایسے حفاظ و ان کے اساتذہ کی حوصلہ افزائی کی گئی جنہوں نے ایک دن میں قرآن مجید زبانی سنایا۔اس موقع پر مدرسہ ہذا کے بچوں نے تلاوت قرآن پاک و نعتیہ کلام پیش کئے۔مہتمم مدرسہ الحاج برہان القادر نے اس دوران ادارہ کی تعلیمی و تعمیری سرگرمیوں کا خلاصہ کرتے ہوئے کہا کہ حفظ کلام اللہ کی تکمیل کرنے و عالمیت سے فارغ ہوئے طلباء و طالبات کی دستار بندی کا عمل جولائی میں انجام دی جائے گی تاہم تعلیمی سال ختم ہونے کے سلسلہ میں آج مختصر تقریب کا اہتمام کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ امسال مدرسہ ہذا سے چار طلباء و 15 طالبات عالمیت کی سند حاصل کی ہے۔ مفسر قرآن و صدر مفتی جامعہ معارف القرآن بٹھنڈی جموں مفتی فیض الوحید نے بخاری شریف کی آخری حدیث کا درس دیتے ہوئے کہا کہ امت کا شب و روز اگر قرآن و حدیث کے مطابق ہو جائے تو دونوں جہاں کی دونوں سرخروئی حاصل ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ قرآن مجید کے بعد بخاری شریف کو دوسرا مقام حاصل ہے۔مفتی فیض الوحید نے بخاری شریف کی آخری حدیث کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ "آپ صل اللہ علیہ و سلم نے فرمایا یہ دو کلمے جو زبان کے لئے نہایت آسان ہیں اور میزان میں بھاری ہیں اور اللہ تعالیٰ کو بہت پسند ہیں‘‘۔ انہوں نے کہا کہ یہ کلمات دنیا و آخرت میں کامیابی کے ضامن ہیں۔ انہوں نے کہا کہ روز محشر میں اعمال کی گنتی نہیں بلکہ تولے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ " سبحان اللہ و بحمدہ سبحان اللہ العظیم"کو پڑھنا،سننا و سمجھنے کی کوشش کرنا سعادت مندی ہے۔ آخر پر انہوں نے پورے عالم کے لئے ایمان، امان و سلامتی کی دعا کرتے ہوئے مدرسہ جامعہ غنیتہ العلوم کے بانی حضرت الحاج غلام قادر غنی پور علیہ رحمہ و سابق استاد دارالعلوم دیوبند حضرت مولانا غلام نبی قاسمی کی حیادت و خدمات کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے ان کی ایصال ثواب کیلئے دعا فرمائی۔اس دوران نظامت کے فرائض مفتی شبیر احمد بٹ صدر مدرس نے انجام دیں جبکہ مدرسہ ہذا کے اساتذہ، طلاب، منتظمین و علاقہ کے معززین نے بھی شرکت کی۔
 

تازہ ترین