تازہ ترین

قرآن پاک سے متعلق سپریم کورٹ میں پٹیشن کا معاملہ

متحدہ مجلس علماء کا شدید ردعمل، بد نیتی کے مترادف قرار دیا

تاریخ    14 مارچ 2021 (00 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک
 سرینگر //جموںوکشمیر مذہبی انجمنوں کے مشترکہ اتحاد متحدہ مجلس علماء نے وسیم رضوی کی جانب سے بدنیتی پر مبنی ایجنڈا ، قرآن پاک کی بعض آیات کے خلاف ہندوستان کی سپریم کورٹ میں درخواست دائر کرکے ان آیات کو خارج کرنے کی عرضی کی شدید مذمت کی۔مجلس علماء نے کہا کہ یہ حرکت جان بوجھ کرکی گئی ہے ، جس کا مقصد مسلمانوں کو مشتعل کرنا اور اسلاموفوبیس( Islamaphobes )ایجنڈے کو آگے بڑھانا ہے جو سراسر اسلام دشمنی اور نفرت و حقارت پر مبنی ہے۔مجلس نے یہ بات واضح کی کہ قرآن کریم حضرت حق جل مجدہ کی نازل کردہ آخری آسمانی کتاب ہے اور اس پر پوری دنیا کے تمام فرقوں کے مسلمانوں کا مکمل اتفاق ہے کہ قرآن کریم اپنی نازل شدہ صورت میں پوری دنیا میں موجود ہے اور تا قیامت باقی رہے گا۔ قرآن کریم کی کسی آیت میں تبدیلی، ترمیم اور تنسیخ کا سوچنا تو دور اس کے ایک زیر و زبر اور ایک نقطہ تک میں ترمیم کی قطعی گنجائش نہیں ہے اور اس میں تبدیلی یا تنسیخ کسی بھی انسان یاایجنسی کے دائرے اختیار سے باہر ہے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ وسیم رضوی کی یہ حرکت صرف پبلسٹی اور شہرت اور ذاتی سیاسی مفادات حاصل کرکے حکومتی ایوانوں تک پہنچنے کی ایک مذموم کوشش ہے۔بیان میں مزید کہا گیا کہ"قرآن کریم کسی کے خلاف تشدد یا نفرت کی تعلیم نہیں دیتا بلکہ یہ ایک ایسا سر چشمہ ہے جو انسانیت ، محبت ، اتحاد اور ہم آہنگی کو فروغ دیتا ہے"۔مجلس علماء نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ رضوی کی اس ناپاک حرکت پر تشدد کا مظاہرہ نہ کریں ، جس کی وجہ سے وہ اور ان کے آقا اپنے ایجنڈے کو آگے بڑھانے کے بارے میں توقع کر رہے ہیں۔متحدہ مجلس علماء کی قیادت میر واعظ عمر فاروق کررہے ہیں۔اس میں شامل جملہ اکائیوںانجمن اوقاف جامع مسجدسرینگر، دارالعلوم رحیمیہ بانڈی پورہ ، مسلم پرسنل لاء بورڈ جموںوکشمیر،انجمن شرعی شیعان، جمعیت اہلحدیث، جماعت اسلامی،کاروان اسلامی، اتحاد المسلمین، انجمن حمایت الاسلام،انجمن تبلیغ الاسلام،جمعیت ہمدانیہ،انجمن علمائے احناف،دارالعلوم قاسمیہ،دارالعلوم بلالیہ ، انجمن نصرۃ الاسلام، انجمن مظہر الحق،جمعیت الائمہ والعلماء ، انجمن ائمہ و مشائخ کشمیر،دارالعلوم نقشبندیہ ، دارالعلوم رشیدیہ ،اہلبیت فائونڈیشن، مدرسہ کنز العلوم ،پیروان ولایت،اوقاف اسلامیہ کھرم سرہامہ ،بزم توحید اہلحدیث ٹرسٹ، انجمن تنظیم المکاتب ، محمدی ٹرسٹ، انجمن انوار الاسلام،کاروان ختم نبوت اور دیگر جملہ معاصر دینی، ملی ، سماجی اور تعلیمی انجمنوں اور سرکردہ مشائخ اور علماء  نے یہ مشترکہ بیان جاری کیا ہے۔ جموں کشمیر کے مفتی اعظم اور مسلم پرسنل لاء بورڈ کے چیئر مین مفتی ناصرالاسلام نے وسیم رضوی کے بیان کو ناقابل معافی قرار دے کر کہا ہے کہ ا س سے امت مسلمہ کے جذبات مجروح ہوئے ہیں اور لوگ سراپا احتجاج ہیں۔
 
 
 

اسلام کے تئیں مذموم کوشش: ڈاکٹر فاروق

نیوز دیسک
سرینگر// نیشنل کانفرنس صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے وسیم رضوی کی اسلام کے تئیں مذموم کوشش پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ اس کے خلاف فوری کارروائی عمل میں لائی جائے۔ڈاکٹر عبداللہ نے کہا کہ قران مجید کی عظمت اور اس کے تقدس کے ساتھ کھلواڑ کرنا گناہ کبیر میں شامل ہے،جبکہ قران حکیم مسلمانوں کیلئے زندگی گزارنے کیلئے ایک لائحہ و دستور عمل ہے۔
 
 
 

 وسیم رضوی کو فوراً گرفتار کیا جائے: درخشاں اندرابی 

نیوز ڈیسک
سرینگر// مرکزی وقف بورڈ کی وائس چیئر پرسن اور وزارت اقلیتی بورڈ کی ممبر ڈاکٹر درخشاں اندرابی نے کہاہے کہ وسیم رضوی کے بیانات توہین آمیز ہیں، وہ ایک مجرم ہے جو اس خطرناک اور مجرمانہ حرکت کے ذریعے کروڑوں مسلمانوں کے جذبات کومجروح کرنے کامرتکب ہواہے ،اسلئے اس مجرم کیخلاف کیس درج کرکے اسے بلاتاخیرگرفتارکیا جائے ۔انہوں نے کہاکہ قرآن مجید کتاب الٰہی ہے جو امن اور بھائی چارے کی تعلیم دیتا ہے، کسی کو بھی اتباع نہیں ہے کہ وہ مقدس کتاب کے مندرجات میں ترمیم کرسکے۔درخشاں اندرابی کاکہناہے کہ وسیم رضوی کچھ سنگین مجرمانہ مقدمات ہیں اور وہ اپنے گھناؤنے ہتھکنڈے استعمال کر کے بچنے کی مہلت حاصل کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اظہار خیال اور آزادی کی اپنی ایک حد ہوتی ہے۔ ڈاکٹر اندرابی نے کہا کہ انہوں نے اس  بارے میں وزیر برائے اقلیتی امور مختار عباس نقوی اور بعد میں قانون نافذ کرنے والے متعلقہ اداروں سے  رابطہ کیا ہے اور مجھے یقین دلایا گیا ہے کہ جلد ہی ان کے خلاف مقدمہ درج کرلیا جائے گا۔
 
 

اللہ کی کتاب کو چیلنج نہیں کیا جاسکتا: بخاری

نیوز ڈیسک
سرینگر//اپنی پارٹی سربراہ سید الطاف بخاری نے وسیم رضوی کی سپریم کورٹ میں دی گئی عرضی کی مذمت کی ہے جس مین قرآن پاک  کی آیات کو حذف کرنے کی بات کہی گئی ہے۔ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ  قرآن پاک اللہ کی کتاب ہے جسے دنیا کی کسی عدالت میں چیلنج نہیں کیا جاسکتا۔انہوں نے کہا کہ رضوی جیسے لوگ امن اور آشتی کے دشمن ہیں جن کیخلاف کارروائی ناگزیر ہے۔انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ انکی عرصی مسترد کرے کیونکہ انکی درخواست سے عالمی سطح پر مسلمانوں کے جذبات کو ٹھیس پہنچی ہے۔