تازہ ترین

شہر کا ناکارہ ڈرینیج سسٹم ،معمولی بارشیں بھی عوام کیلئے پریشانیوں کا باعث

تاریخ    11 مارچ 2021 (00 : 01 AM)   


نمائندہ عظمیٰ
سرینگر // شہر کے ناکارہ ڈرنیج سسٹم کو ٹھیک کرنے میں سرکار مکمل طور پر ناکام ہو گئی ہے اورشہر میں معمولی بارش بھی اب مکینوں کیلئے پریشانی کا سبب بن رہی ہے۔شہر سرینگر میں سنیچر کو چند منٹوں کیلئے بارش کیا ہوئی کہ شہر کے گلی کوچے پانی سے بھر گئے اور لوگوں کو پھر عبور ومرور میں سخت دقتوں کا سامنا کرنا پڑا اور ایسا پہلی بار نہیں ہوا بلکہ ہر بار یہ صورتحال دیکھنے کو ملتی ہے لیکن اس کی روکتھام کیلئے سرکاری طور پر کوئی بندوبست نہیں کیا جارہا ہے۔تاجروں کا کہنا ہے کہ تجارتی مرکز سرینگر میں چند گھنٹوں کی بارش سے پورا شہر ہی ڈوب جاتا ہے اورپانی پر تیر تی پلاسٹک بوتلیں اور پالیتھین کے لفافوں نے انتظامیہ کی قلعی کھول کے رکھ دی ہے لیکن یہ سب کچھ دیکھنے کے باوجود بھی سرکار خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے اور شہر کے لوگوں کو حالات کے رحم وکرم پر چھوڑا گیا ہے۔مقامی تاجروں کا کہنا ہے کہ یہ اب ایک معمول بن گیا ہے کہ معمولی بارش بھی اْن کیلئے پریشانی کا سبب بن کر آتی ہے اور انہیں یہ فکر لگی رہتی ہے کہ اگر خدا نخواستہ کہیں 4یا پانچ دن کی بارش ہو تو پورا شہر ہی ڈوب جائے گا۔شہری آبادی کا کہنا ہے کہ سرکار اور مونسپل حکام زبانی جمع خرچ سے کام لیتے ہوئے یہ دعویٰ تو کر رہے کہ شہر میں خستہ ہو چکے ڈرنیج سسٹم کو دوبارہ سے بحال کرنے کیلئے رقومات خرچ کی جا رہی ہے لیکن شہر میں بارشوں کے دوران سڑکوں اور گلی کوچوں جب تالاب کا منظر پیش کرتے ہیں تو اس سے محکمہ کی قلعی کھل جاتی ہے۔لوگوں کا کہنا ہے کہ سال 2014کے تباہ کن سیلا ب میں شہر کا ڈرنیج سسٹم مکمل طور پر مفلوج ہو گیا تھا تاہم چار سال سے زیادہ کا عرضہ گررنے کے باوجود اس کی حالت میں کوئی سدھار نہیں آیا ہے۔شہر کے فاروق احمد نامی ایک شہری نے بتایا کہ کہ جب بھی محکمہ موسمیات بارشوں یا پھر برف باری کی پیش گوئی کرتا ہے تو اس دوران لوگوں کو پہلے سے ہی پریشانی لاحق ہو جاتی ہے، اگرچہ محکمہ کے اہلکار یہ کہہ کر انہیں تسلیاں دیتے ہیں کہ گھبرانے کی کوئی ضرورت نہیں ہے اور ایسے میں لوگوں کے گھروں کے اندر بھی پانی جمع ہو جاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ شہر کے بٹہ مالو ، کرسو راجباغ ، سرائے بالا ، جہانگیر چوک ، گھنٹہ گھر ، ریڈنسی روڑ ، ہری سنگھ ہائی سٹریٹ ، کورٹ روڑ ، مولانا آزاد روڑ کی سڑکیں معمولی پانی کی وجہ سے تالاب کی شکل اختیار کر لیتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ سرکار یہ دعویٰ کرتے کرتے تھکتی نہیں ہے کہ شہر یوں کو بنیادی سہولیات فراہم کی جا رہی ہیںلیکن جو شہر ناکارہ ڈرنیج سسٹم سے جوج رہا ہو وہاں کی آبادی کو کس طرح مشکلات ہیں اس بارے میں اْس کو زبانی جمع خرچ سے کام لینے کے بجائے عملی طور پر اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے۔