تازہ ترین

اسلامیہ کالج اور 6سرکاری و نجی سکول بند | تعلیمی اداروں میں کورونا کی دستک | 25اساتذہ ، 4ملازمین اور ایک طالبہ سمیت 30متاثر

تاریخ    8 مارچ 2021 (54 : 12 AM)   


پرویز احمد
سرینگر //کشمیر میں اتوار کو16سالہ طالبہ ، باورچی اور 5اساتذہ سمیت تعلیم و تدریس سے جڑے 7افرادکی رپورٹیں مثبت آئیں ۔15فروری سے  7مارچ تک مختلف سکولوں اور کالجوں میں 25اساتذہ،غیر تدریسی عملہ کے 4افراد اور ایک طالبہ سمیت  30افراد کی رپورٹیں مثبت آئی ہیں جبکہ ابتک 4سکول اور ایک کالج بند کردیئے گئے ہیں۔ ہائرسیکنڈری سکول کھاگ، گورنمنٹ مڈل سکول ہانجی گورو،آئی ای آئی سکول ،مظہرالحق ہائی سکول بڈگام کے علاوہ اسلامیہ کالج سرینگر کو بھی بند کردیا گیا ہے۔اس سے قبل ہائر سکنڈری سکول کھاگ میں دو اساتذہ اور ہائی سکول کاٹھی پورہ لولاب میں ایک اساتذہ کے ٹیسٹ مثبت آئے تھے اور ان سکولوں کو بھی بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔ چیف میڈیکل آفیسر بڈگام ڈاکٹر تجمل حسین نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ نجی سکو ل کے ایک استاد کی رپورٹ مثبت آئی لیکن اس کے رابطوں کا پتہ لگانے کے دوران دوسرے نجی سکول میں زیر تعلیم9ویں جماعت کی16سالہ طالبہ کی رپورٹ بھی مثبت آئی‘‘۔ ڈاکٹر تجمل نے کہا کہ مختلف سرکاری سکولوں کے 3اساتذہ کی رپورٹیں بھی مثبت آئی ہے‘‘۔انہوں نے بتایا ’’ ضلع میں مجموعی طور پر 7212اساتذہ کے نمونوں کی تشخیص کی گئی جن میں سے 10اساتذہ کی رپورٹیں مثبت آئی ہیں‘‘۔ادھر بڈگام ضلع میں کوروناوائرس کے پھیلائو پر نظر گزر رکھنے کیلئے تعینات ڈاکٹرعادل بشیر نے اپنے ایک حکم نامہ زیر نمبرCOVID-19/BUD/264-266بتاریخ 7مارچ 2021کے تحت تین دنوں کیلئے سکول بند کرنے کی ہدایت دی ہے۔ نوڈل آفیسر نے اپنے حکم نامہ میں مذکورہ اساتذہ اور طالبہ کے رابطے میں آنے والے تمام افراد سے اپیل کی ہے کہ وہ ازخود قرنطین میں چلے جائیں اور سامنے آکر تشخیصی ٹیسٹ کرائے ۔ ادھر شمالی کشمیر کے بارہمولہ ضلع میں ہدی پورہ  رفیع آباد ہائرسیکنڈری سکول میں منتقل کئے گئے ڈگری میں عملہ کے 2 افراد کی رپورٹیں مثبت آئیں ۔اس سے قبل سنیچر کو اسلامیہ کالج سرینگر کے شعبہ کمسٹری میں ایک استاد سمیت 3افراد کی رپورٹیں مثبت آئیں اور اسطرح سرینگر ضلع کے مختلف کالجوں اور سکولوں میں تعینات15افراد کی مثبت رپورٹیں سامنے آئیں  جن میں 12اساتذہ اور غیر تدریسی عملہ سے وابستہ 3افراد شامل ہیں۔ اسلامیہ کالج حول میں سنیچر کو شعبہ کمسٹری میں تعینات ایک پروفیسر سمیت 3افراد کی رپورٹیں مثبت کے بعد کالج کو 5دنوں کیلئے بند کردیا گیا ہے۔ پرنسپل اسلامیہ کالج پروفیسر شیخ اعجاز کی جانب سے جاری کئے گئے ایک حکم نامہ زیر نمبر آئی سی ایس 3718-23  بتاریخ 6فروری 2021میں کہا گیا ہے کہ کالج 8مارچ سے13مارچ تک بند رہے گا تاہم اس دوران کالج میں انڈر گریجویٹ اور پوسٹ گریجویٹ کلاسوں کیلئے آن لائن کلاسوں کا سلسلہ LMSکے ذریعے جاری رکھا جائے گا جبکہ15مارچ  کے بعد کالج میں معمول کے مطابق تدریسی عمل شروع کیا جائے گا۔  
 
 

حضرت بل، صورہ اور کلاشپورہ میں | معراج عالمؐ شب خوانی تقاریب نہیں ہونگی

ارشاد احمد
سرینگر//وقف بورڈ کی جانب سے جاری حکمنامہ کے مطابق آثار شریف حضرت بل، جناب صاحب صورہ اور آثار شریف کلاشپورہ میں کوویڈ - 19 کے باعث 11 مارچ کو شب معراج کی تقریبات منسوخ کردی گئی ہیں اوراُس روز کوئی شب خوانی نہیں ہوگی ۔جموں کشمیر وقف بورڈ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر مفتی فرید الدین نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ سنیچر کو ایک نشست  میں وقف بورڈ کے اعلیٰ حکام،سجادہ نشین اور دیگر سرکردہ شخصیات نے شرکت کی جس میں اس بات کا فیصلہ کیاگیا کہ کوویڈوبائی بیماری کے پیش نظر شب معراج کے موقع پر آثار شریف حضرت بل، جناب صاحب صورہ اور آثار شریف کلاشپورہ میں کوئی شب خوانی کی تقریب منعقد نہیں کی جائے گی تاہم اُس روز 5 اوقات کی نمازوں پر موئے مقدسؐ کی زیارت سے فرزندان توحید کو فیضیاب کرایا جائیگا۔انہوں نے کہا کہ شب معراج کے موقعہ پر ہزاروں کی تعداد میں لوگ جمع ہوسکتے ہیں اور اس بات کا قوی احتمال ہے کہ کوروناکے بچاؤ کے لئے رہنما خطوط پر عمل پیرا ہونے میں دشواریاں پیش آسکتی ہیں لہٰذاتمام شرکاء نے اتفاق رائے سے یہ فیصلہ لیا کہ شب خوانی کی مجلس ملتوی کردی جائے ۔
 
 
 

۔.80سالہ معمر شخص فوت | 24گھنٹوں میں 26309ٹیسٹ کئے گئے

پرویز احمد 
 سرینگر //13جنوری کے بعد کورونا وائرس متاثرین کی تعداد میں ایک بار پھر اتوار کو اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔جو 112 تھی۔13جنوری کو سو سے زائد معاملات مثبت آئے تھے، جس کے بعد25فروری اور بعد میں 3مارچ جموں و کشمیر میں کورونا وائرس متاثرین کی تعداد 100سے زائد ہوئی تھی۔اب چوتھی بار قریب دو ماہ کے دوران 100سے زیادہ کورونا متاثرین معاملات سامنے آئے ہیں۔کورونا کیسز کی تعداد پورے ملک میں بڑھ رہی ہے اور دوسری لہر کے دوران مثبت معاملات میں بدتریج اضافہ ہورہا ہے۔اس طرح پچھلے دو ماہ سے وائرس متاثرین میں لگاتاراضافہ ہورہا ہے۔نئے متاثرین میں22مسافر، دو کمسن اور ایک فوجی شامل ہیں۔ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ایک شہری وائرس کا شکار ہوگیا ہے۔ جموں کشمیر میںپچھلے 24گھنٹوں کے دوران 26309تشخیصی ٹیسٹ کئے گئے جن میں سے 112افراد کی رپورٹیں مثبت آئیں۔ ان میں 19جموں جبکہ 93کشمیر سے تعلق رکھتے ہیں۔کشمیر سے تعلق رکھنے والے93افراد میں 77مقامی سطح پرجبکہ 16افراد مختلف ریاستوں اور ممالک سے سفر کرنے کے بعد لوٹے ہیں۔ اس دوران محکمہ صحت کے ایک سینئر ڈاکٹر نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ راولپورہ سے تعلق رکھنے والا 80سالہ معمر شخص کورونا وائرس سے پیدا ہونے والے نمونیا سے سی ڈی اسپتال میں فوت ہوگیا ۔ 15فروری سے لیکر7 مارچ تک 1622افراد کی رپورٹیں مثبت آئیں جن میں سے1295کشمیر سے تعلق رکھتے ہیں ۔ کشمیر سے تعلق رکھنے والے1295افراد میں سے861مقامی سطح پر جبکہ 495بیرون ریاستوں اور ممالک سے لوٹے ہیں۔کشمیر صوبے میں متاثرین کی مجموعی تعداد74942ہوگئی ہے۔ کشمیر صوبے میں 15فروری سے لیکر8 مارچ تک 8افراد فوت ہوئے ہیں اور اسطرح یہاں ابتک 1235ہوگئی ہے۔تازہ واقعات میں ، 19 جموں ڈویژن سے اور 93 وادی کشمیر سے ہیں۔سرینگر میں 35 ، بارہمولہ 19 ، بڈگام 12 ،پلوامہ 4 ، کپواڑہ 8 ، اننت ناگ 9 ، بانڈی پورہ 1 ، گاندربل 1 ، کولگام 1 ، شوپیاں 3 ، جموں 15 ، اودھم پور 1 ، پونچھ 2  اور ریاسی میں 1 مثبت آیا۔سی ڈی اسپتال میں مثبت آنے والے کیسوںمیں نسیم باغ سے دو مرد ، گامراج سے ایک ، گٹرو سے ایک خاتون، دو مرد اور تین خواتین ترچھ سے ، ایک خاتون بانڈر پورہ سے، بونورہ پلوامہ سے ایک خاتون،بادامی باغ سے فوجی اہلکار،لالبازار سے دو شہری،ترال سے ایک،جواہر نگر سے مرد و خاتون،کاتون چھتہ بل سے اور وانگن پورہ سے ایک شہری شامل ہیں۔نرورہ ، پیٹھ کوٹ، کنڈورہ کی تین خواتین،بادی پورہ بڈگام کا شہری،گوٹلی باغ کی خاتون،ددرہامہ گاندربل سے ایک شہری،جواہر نگر سے ایک مرد اور ایک خاتون لالبازار سے ایک خاتون،اور راولپورہ سے ایک شخص شامل ہیں۔اسکے علاوہ ترال اور چیوہ کلاں سے دو افراد مثبت نکلے۔مزید یہ کہ انہوں نے کہا کہ کوویڈ  کے مزید 101 مریض صحت یاب ہوئے ہیں اور انہیں مختلف اسپتالوں سے فارغ کیا گیا ہے۔ان میں  26 جموں ڈویژن سے اور 75 وادی کشمیر سے ہیں۔