محبوبہ مفتی کوانفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کا بلاوا،15مارچ کو دلی طلب

تاریخ    6 مارچ 2021 (00 : 01 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر// پی ڈی پی صدر اورسابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کو انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے منی لانڈرنگ (رقومات کا ناجائز لین دین) معاملے میں15مارچ کو طلب کرلیا ہے۔ محبوبہ مفتی نے  اس پر اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا  ہے کہ حکومت ہند سیاسی حریفوں کو خوفزدہ کرنے کی حکمت عملی پر پیرا ہے۔ مرکزی ایجنسی انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کی ایک ٹیم جمعہ کوپی ڈی پی صدر کی سرکاری رہائش گاہ واقع فئر ویو گپکار روڑ سرینگر سمن لیکر پہنچی تاہم بتایا جاتا ہے کہ یہ سمن محبوبہ مفتی کے اہل خانہ نے نہیں لی۔سمن میں محبوبہ مفتی کو15مارچ کو منی لانڈرنگ( رقومات کا ناجائز لین دین) معاملے میں انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کے دہلی ہیڈ کوارٹر طلب کیا گیا ہے۔ پی ڈی پی کے ایک ترجمان طاہر سعید نے اس بات کی تصدیق کی کہ کچھ لوگ محبوبہ مفتی کی سمن لیکر آئے تھے تاہم وہ شہر میں نہیں تھی،اس لئے کسی نے بھی وہ سمن نہیں لی‘‘۔ انہوں نے مزید کہا کہ انکے اہل خانہ کو اس بات کا علم نہیں ہے کہ یہ سمن کس سلسلے میں تھی۔ معلوم ہوا ہے کہ یہ کیس انسداد منی لانڈرنگ قانون کے تحت درج کیا گیا ہے،تاہم کیس کے مزید تفصیلات کے بارے میں مزید معلومات نہیں ہیں۔ اس دوران محبوبہ مفتی نے ردعمل ظاہر کرتے ہوئے سماجی رابطہ گاہ ٹیوٹر پر تحریر کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کی کوتاہ اندیشی قابل عمل نہیں ہے۔انہوں نے کہا’’حکومت ہند سیاسی مخالفین کو خوفزدہ کرنے اور انہیں اپنی قطار میں کھڑا کرنے کی تکلیف دہ حکمت عملی عام ہوگئی ہے، وہ نہیں چاہتے کہ ہم ان نا قابل عمل کارروائیوں اور پالیسیوں کے بارے میں سوال کھڑے کریں،ایسی کوتاہ نظری نا قابل عمل ہے‘‘۔

تازہ ترین