لامڑ کولگام میں زمین دھنسنے سے میوہ باغات کو نقصان

تاریخ    5 مارچ 2021 (00 : 01 AM)   


عارف بلوچ
اننت ناگ //جنوبی کشمیر کے کولگام علاقہ میں زمین دھنس جانے کی وجہ سے سینکڑوں کنال میوہ باغات کو نقصان پہنچا ہے۔لامڑ کولگام میں گزشتہ سال مرکزی معاونت والی اسکیم پردھان منتری گرام سڑک یوجنا کے تحت سڑک بنائی گئی۔تاہم سڑک کے دونوں اطراف میںپختہ بنڈ اور ڈرینج سسٹم کا انتظام نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے پانی میوہ باغات میں جارہا ہے جس کے نتیجے میں 40 کنال میوہ باغات کی زمین دھنس گئی اور ان میں موجود درجنوں سیب اور اخروٹ کے درخت جڑ سے اکھڑ گئے ۔زمین دھنس جانے سے کئی رہائشی مکانات کو بھی نقصان پہنچنے کا اندیشہ ہے۔زمین کے مسلسل دھنسنے کے باعث کسانوں میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔کسانوں نے محکمہ پی ایم جی ایس وائی کے تئیں سخت برہمی کا اظہار کیا ہے۔ مقامی لوگوں نے بتایا کہ سڑک تعمیر کرتے وقت انہوں نے بنڈ اور ڈرینج سسٹم کی مانگ کی تھی لیکن اُن کی آواز صدا بہ صحرا ثابت ہوئی۔ انہوں نے انتظامیہ سے فوری مداخلت کی اپیل کی ہے ۔ایگزیکٹیو انجینئر پی ایم جی ایس وائی کولگام فاروق احمد منٹو نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ سڑک کے کئی حصوں پر بند تعمیر کئے گئے ہیں لیکن موسم سرماکے باعث سڑک پر مزید تعمیراتی کام روک دیا گیا تھا۔انہوں نے کہا کہ موسم میں بہتری آنے کے بعد اب بنڈ اور ڈرینج سسٹم تعمیر کیا جائے گا۔
 

تازہ ترین