پلوامہ میں محکمہ بجلی کے خلاف احتجاج | عارضی ملازمین نے مستقلی کا مطالبہ کیا

کھاگ کی ایک بستی بجلی سپلائی سے محروم

تاریخ    4 مارچ 2021 (00 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک
پلوامہ// جنوبی ضلع پلوامہ میں محکمہ بجلی سے وابستہ عارضی ملازمین نے احتجاج کرتے ہوئے اپنی مستقلی کی مانگ کی۔احتجاج میں پلوامہ اور شوپیاں سے آئے ہوئے سینکڑوں عارضی ملازمین نے احتجاج کیا۔احتجاجی ملازمین نے محکمہ بجلی کے اعلیٰ حکام کے خلاف نعرہ بازی کرتے ہوئے اُن کے مطالبات کو نظر اندازکرنے کا الزام عائد کیا۔احتجاج میں شامل ایک عارضی ملازم نے بتایا کہ وہ محکمہ بجلی میں گزشتہ دس برسوں سے یومیہ اجرت پر کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ ڈپارٹمنٹل پرموشنل کمیٹی ( DPC) نے 14 جنوری 2019 کو عارضی ملازمین کی مستقلی کے حوالے سے رپورٹ جموں و کشمیر انتظامیہ کو پیش کی تھی اوراس رپورٹ پر آج تک عملدرآمد نہیں کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ اگر اُن کی مستقلی کے سلسلے میں انتظامیہ سنجیدگی کا مظاہرہ نہیں کرتی ہے تووہ احتجاج میں شدت لانے کیلئے مجبور ہو جائیں گے۔
 

کھاگ کی ایک بستی بجلی سپلائی سے محروم

 
بڈگام// کھاگ بیروہ کے شاہ فتح پورہ میں بجلی کی عدم دستیابی سے لوگ مشکلات کا شکار ہیں۔ مقامی لوگوں کے مطابق بجلی کی عدم دستیابی کی وجہ سے انہیں طرح طرح کے مسائل کا سامنا ہے۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ انہوں نے کئی بار یہ معاملہ ضلع انتظامیہ کی نوٹس میں لایا تاہم کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔مقامی آبادی کا کہنا ہے کہ چند برس قبل علاقے میںبجلی کے کھمبے لائے گئے لیکن آج تک وہ نصب نہیں کئے گئے بلکہ ایک ہی جگہ پڑے ہوئے ہیں۔لوگوں کا کہنا ہے کہ محکمہ اس صورتحال سے باخبر ہے لیکن اس سمت میں کوئی پیش رفت نہیں ہوئی۔ مقامی لوگوں نے گورنر انتظامیہ سے اپیل کی ہے کہ انہیں بجلی فراہم فراہم کرانے کیلئے اقدامات کئے جائیں۔
 

تازہ ترین