تازہ ترین

ہوکرسر اور گلسر آبگاہوں کی شان رفتہ بحال ہوگی

مقامی لوگ اپنا کردار ادا کریں : ڈویژنل کمشنر

تاریخ    28 فروری 2021 (00 : 01 AM)   


سرینگر // ڈویژنل کمشنر کشمیر پی کے پولے نے ضلع ترقیاتی کشمیر سرینگر شاہد اقبال چودہدی کے ہمراہ سنیچر کو گلسر اور ہوکرسر آبگاہوں کا دوروہ کر کے وہاں بحالی کے کاموں کا جائزہ لیا ۔ اس موقع پر مقامی لوگوں نے ڈویژنل کمشنر سے ملاقات کی اور انہیں آبگاہ کی خستہ حالت سے آگاہ کیا ۔لوگوں نے بتایا کہ پانی کی نالیوں میں گندگی پولیتھن اور کچرا پھینکنے سے اس کا رخ مڑ گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ غیرقانونی تعمیرات نے بھی جھیل کی شان خراب کردی ہے۔مقامی لوگوں نے مطالبہ کیا کہ آبگاہ کو اپنی اصل ہیت پر بحال کرنے کیلئے فوری طور اقدامات کرنے کی ضرورت ہے ۔انہوں نے ڈویژنل کمشنر سے درخواست کی کہ وہ شہر کے وسط میں واقع گلسر سے متصل ایک بڑی آبی ذخیرہ خوشحال سر کی بحالی کے ان کے طویل مطالبے پر روشنی ڈالی۔صوبائی کمشنر نے مقامی لوگوں کو یقین دلایا کہ حکومت اس آبگاہ کی شان رفتہ کو کم سے کم وقت میں بحال کرنے کیلئے تمام اقدامات کرے گی۔ انہوں نے متعلقہ افسران کو ہدایت کی کہ وہ لوگوں کو اس تاریخی آبی ذخیرے میں کوڑا کرکٹ پھینکنے سے روکنے کے علاوہ غیرقانونی تجاوزات اور اراضی کی بھرائی  کے خاتمہ کیلئے ضروری اقدامات کریں۔ڈویڑنل کمشنر نے کہا کہ جھیل کی اپنی ایک تاریخ ہے ۔ انہوں نے مقامی لوگوں سے آبگاہ کی بحالی کے عمل میں اپنا کردار ادا کرنے کی اپیل کی ۔ انہوں نے ان سے کہا کہ وہ ذمہ دار شہری کی حیثیت سے کام کریں اور آبگاہ میں کوڑا کرکٹ اور پولی تھین پھینکنے سے باز رہیں اور دوسروں کو بھی اس کی تلقین کریں ۔بعدازاں انہوں نے سرینگر شہر کے 90 فٹ سڑک ، صورہ اور عالمگری بازار کے کئی علاقوں کا دورہ کیا ،تاکہ مختلف علاقوں میں پینے کے پانی کی فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے پی ایچ ای محکمہ کے ذریعہ پانی کے پائپ بچھانے کے دوران آنے والی رکاوٹوں کا جائزہ لیا جا سکے ۔متعلقہ افسر نے انہیں بتایا کہ سری نگر شہر کے مختلف علاقوں میں پینے کے پانی کی فراہمی کیلئے پائپ بچھانے کو یقینی بنانے کیلئے 90 فٹ روڑ صورہ اور عالمگری بازار میں متعدد دکانوں کو مسمار کرنے کی ضرورت ہے۔دورے کے دوران ان کے ہمراہ  اعلیٰ افسران بھی  تھے ۔ 

تازہ ترین