تازہ ترین

بھارت میں کورونا وائرس کی دوسری لہرمیں 21فیصد اضافہ

چیف سیکریٹریوں کی میٹنگ طلب، وائرس کو قابو میں رکھنے کیلئے ضروری ہدایات

تاریخ    28 فروری 2021 (00 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک
جموں //مرکزی کابینہ سکریٹری صحت راجیو گوبا نے سنیچر کو ایک اعلیٰ سطح میٹنگ میں تمام ریاستوں اور مرکزی زیر انتظام علاقوں میں کورونا وائرس کی وباء پر نظر گزر رکھنے کی ہدایت دی تا کہ متاثرین کی تعداد میں اضافہ کو روکا جاسکے اور ترجیحاتی گروپوں کی ٹیکہ کاری قوائد و ضوابط کے تحت مکمل کی جاسکے۔ چیف سیکریٹری بی وی آر سبرامنیم کے علاوہ چیف سیکریٹری چھتیس گڑھ، گجرات، مدھیہ پردیش ، مہاراشٹرا ، پنجاب، تلنگانہ اور مغربی بنگال بھی میٹنگ میں موجود تھے۔صورتحال کا جائزہ لیتے ہوئے کابینہ سیکریٹری نے کہا کہ بھارت میں کورونا وائرس کے کیسوں میں اضافہ درج کیا جاریا ہے اور اب اوسطاً 14300 ،ہفتہ درہفتہ متاثرین کی تعداد میں 21فیصد اضافہ ہورہا ہے۔ کابینہ سیکریٹری نے کہا کہ تمام ریاستوں اور مرکزی زیر انتظام علاقوں میں ٹیکہ کاری کے علاوہ مختلف محازوں پر کیسوں میں اضافہ کو روکنا ہوگا اور خاص طور پر جب وائرس کے نئے اقسام سامنے آرہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ٹیکہ کاری کا تیسرا مرحلہ ترجیحاتی گروپوں کو دیا جائے گا جنکی عمر 60سال سے او پر ہو جبکہ مختلف بیماریوں میں مبتلا 45سے 59سالہ لوگوں کو بھی ویکسین دیا جائے گا۔ انہوں نے تمام مرکزی زیر انتظام علاقوں اور ریاستوں کو مشورہ دیا کہ وہ کورونا وائرس کیلئے وضع معیاری ضوابطہ اخلاق کے اطلاق کیلئے لوگوں کو ذہنی طور پر تیار کریں اور اس کے علاوہ ان تمام اضلاع میں ٹیسٹنگ کے عمل کو تیز کریں جہاں مقررہ حدف مکمل نہیں ہو پارہا ہے۔اس موقع پر چیف سیکریٹری نے جانکاری دیتے ہوئے بتایا کہ جموں و کشمیر سرکار نے تمام سفر کرنے والوں کیلئے تشخیصی ٹیسٹ لازمی قرار دیا ہے چاہئے وہ ، زمینی، ریل یا ہوائی سفر کرکے لوٹ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر میں ہفتہ وار تعداد میں 40فیصد اضافہ ہوا ہے جن میں 2/3مختلف ریاستوں اور ممالک کا سفر کرکے لوٹے ہیں جبکہ سرینگر ضلع میں نئے معاملات میں 50فیصد افراد مختلف ریاستوں اور ممالک سے سفر کرکے واپس لوٹے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر سرکار نے اس کیلئے ٹھوس اقدامات اٹھائے ہیں اور کورونا وائرس پر نظر رکھی ہے ، خاص کر ان اضلاع میں جہاں سیاحوں کو آنا ہے۔ انہوں نے ٹیکہ کاری مہم کی جانکاری دیتے ہوئے بتایا کہ جموں و کشمیر میں 67فیصد ہیلتھ ورکروں اور 59فرنٹ لائن ورکروں کو ابتدائی طور پر ٹیکہ لگائے گئے ہیں اور آئندہ دنوں ترجیحاتی گروپوں کی ٹیکہ کاری کا عمل شروع کیا جائے گا۔  انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کیلئے مختلف رکھے گئے اسپتالوں میں اسوقت صرف 4فیصد یعینی 100مریض زیر علاج ہیں جبکہ وہاں 3000مریضوں کے داخلہ کی سہولیات دستیاب رکھی گئی ہے۔ چیف سیکریٹری نے کہا کہ مجموعی طور پر جموں و کشمیر میں کورونا وائرس کی صورتحال قابو میں ہے اورلوگ معمول کا کام کررہے ہیں۔