تازہ ترین

سونہ مرگ دوبارہ بند، جموں شاہراہ بحال

بالائی علاقوں میں برفباری، میدانوں میں بارشیں، کپوارہ میں تودے گرنے کی وارننگ

تاریخ    28 فروری 2021 (00 : 01 AM)   


اشفاق سعید+محمد تسکین
 سرینگر +بانہال // محکمہ موسمیات کی پیش گوئی کے عین مطابق وادی کشمیر کے بالائی علاقوں میں تازہ برف باری جبکہ میدانی علاقوں میں رک رک کر بارشوں سے  معمولات زند گی متاثر رہے  ۔محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ آج دوپہر سے موسم میں بہتری آئے گی۔ادھر جموں سرینگر شاہراہ جمعہ کی شب بند ہونے کے بعد سنیچر دوپہر بعد بحال کی گئی۔شہر سمیت وادی میں جمعہ کی شام سے ہی بارشیں شروع ہوئیں جو شام دیر گئے بعد رک گئیں۔ لیکن سنیچر کی صبح سے بارشوں کا سلسلہ پھر شروع ہوا اور دوپہر کو بارشوں کیساتھ ہلکی برف بھی گری۔ معلوم ہوا ہے کہ کپوارہ کے بالائی علاقو ں ، گلمرگ ، پہلگام ، افروٹ ، رازدان ٹاپ ، سنتھن ٹاپ ، پیر کی گلی اور دیگربالائی علاقوں میں تازہ برف باری ہوئی ۔

وادی

  وسطی ضلع گاندربل اور کرگل میں جمعہ کو برفباری کا سلسلہ سنیچر بھی جاری رہا ۔ غلام نبی رینہ کے مطابق برفباری کی وجہ سے گگن گیر، کلن سڑک پر پھسلن پیدا ہوئی جس کی وجہ سے چھوٹی گاڑیوں کو چلنے میں دشواریاں پیش آئیں۔تازہ برفباری کے نتیجے میں سونہ مرگ کو سنیچر سے احتیاطی طور پر گاڑیوں کی آمدورفت کیلئے بند کیا گیا ۔ کرگل میں 3 انچ، گمری میں4انچ ، منی مرگ میں 4 انچ، زوجیلامیں 8  انچ ، سونہ مرگ 1 فٹ، گگن گیر 6 انچ کلن 3 انچ اور گنڈمیں 2 انچ برف ریکارڈ کی گئی جبکہ گنہ ون، کنگن اور وسن میں دن بھر بارشیں ہوتی رہیں ۔ادھر برفباری سے ہنگ سونہ مرگ میں برفانی تودہ گرآیا ۔بارہمولہ سے نمائندے فیاض بخاری کے مطابق ضلع کے پہاڑی اور میدانی علاقوں میں دن بھر بارشوں اور ہلکی برف باری کا سلسلہ جاری رہا۔گلمرگ میں 1فٹ ، ٹنگمرگ میں 5انچ ، بابا ریشی میں 7انچ ،بارہمولہ کے میدانی علاقوں میں 2انچ سے 3انچ برف ریکارڈ کی گئی ۔ ضلع کے رفیع آباد میں 4انچ ، حاجی بل بارہمولہ میں 10انچ تازہ برف ریکارڈ کی گئی ۔حاجی بل کا سڑک رابطہ برف باری کی وجہ سے ضلع صدر مقام سے کٹ کر رہ گیا ہے ۔ادھر اوڑی سے اطلاع ہے کہ وہاں کے بالائی اور میدانی علاقوں میں بارشیں اور برف باری ہوئی ۔ بانڈی پورہ کے بالائی علاقوں میں بھی ہلکی برف باری ہوئی جبکہ میدانی علاقوں میں بارشوں کا سلسلہ جاری تھا ۔کپوارہ سے اشرف چراغ کے مطابق تازہ برف باری کی وجہ سے بالائی علاقوں کی سڑکیں بند ہو چکی ہیں ۔ضلع میں گزشتہ دو روز سے  بارشوں کا سلسلہ جاری ہے۔ہفتہ کی صبح سے ضلع کے بالائی علاقوں میں بھاری برف باری کا سلسلہ شروع ہوا جبکہ میدانی علاقوں میں ہلکی برف باری ہوئی ۔ چوکی بل کرناہ سڑک کو جمعہ کے روز  بند کر دیا گیا تاہم ہفتہ کے روز آمد و رفت کے لئے بحال کیاگیا ۔ تازہ برف باری کے نتیجے میں فرکیا ں گلی اور زیڈ گلی مژھل پر ڈیڑھ فٹ برف ریکارڈ کی گئی اور ان سڑکو ں کوبند کر دیا گیا ہے ۔ادھر ڈپٹی کمشنر کپوارہ نے کہا کہ مژھل ،کیرن ،کرناہ ،بڈنمل ،کمکڑی اور نوگام علاقوں میں پسیا ں گر آنے کا خطرہ لا حق ہے اور ان علاقوں میں رہائش پذیر لو گ چلنے پھرنے میں احتیاط برتیں تاکہ کوئی حادثہ پیش نہ آئیں ۔ جنوبی کشمیر کے کولگام، پلوامہ، شوپیاں اور اننت ناگ کے میدانی علاقوں میں بارشیں ہوئیں  جبکہ کچھ ایک بالائی علاقوں پہلگام ،آرڑو، چندن واڑی ،امرناتھ گپھا،پنجترنی،مہاگنس ٹاپ،پسو ٹاپ،شیش ناگ، پیر کی گلی ، سنتھن ٹاپ اور دیگر ملحقہ علاقوں میں اچھی خاصی برفباری ہوئی۔محکمہ موسمیات کے ڈائریکٹر سونم لوٹس کے مطابق آج دوپہر سے وادی میں موسم میں بہتری آئے گی ۔

شاہراہ

جمعہ کی رات سے شروع ہوئی بارشوں کی وجہ سے رام بن بانہال سیکٹر میں پتھروں کے گرنے کی وجہ سے ناشری ٹنل کے آر پار سینکڑوں مسافر گاڑیوں کو  ہفتے کی دوپہر سے وادی کشمیر کی طرف دوبارہ چھوڑ دیا گیا۔ڈی ایس پی ٹریفک نیشنل رام بن پارول بھاردواج نے بات کرنے پر کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ بانہال رام بن سیکٹر میں بارشوں کی وجہ سے ٹریفک کو جمعہ کی رات نو بجے سے ہی احتیاطی طورآگے بڑھنے سے روک دیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ سنیچر صبح تین بجے سے رام بن بانہال سیکٹر میں پنتھیال اور رام بن کے درمیان مختلف مقامات پر پتھروں اور پسیوں کے گرنے سے شاہراہ ناقابل آمدورفت بن گئی اور ٹریفک کو رام بن ، چندرکوٹ ، پیڑہ اور چنینی پر روک دیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ تعمیراتی کمپنیوں کی مدد سے سڑک کو ہفتے کی دوپہر مکمل طور پر قابل آمدورفت بنایا گیا اور سینکڑوں کی تعداد میں درماندہ مسافر گاڑیوں کو وادی کشمیر کی طرف جانے کی اجازت دی گئی۔ انہوں نے کہا کہ رام بن اور ناشری کے درمیان 1400سے زائد گاڑیاں درماندہ تھیں اور ان میں سے بیشتر مسافر گاڑیوں نے ہفتے کی شام تک جواہر ٹنل پار کیا تھا۔