روڈسیفٹی پر ٹریفک پولیس کے اہتمام سے سمینار

تمام فریقین کو آپسی تال میل سے اپنا کردار اداکرنے کا مقررین کا مشورہ

تاریخ    24 جنوری 2021 (00 : 01 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر// سرینگر میں ٹریفک پولیس کی طرف سے منعقدہ سمینار میں شرکاء نے ٹریفک نظام سے جڑے ہوئے تمام فریقین کو اپنا کردار ادا کرنے پر زور دیتے ہوئے آپسی تال میل اور ہم آہنگی کا مشورہ دیا۔سرینگر میں محکمہ اطلاعات و عوامی رابطہ عامہ کے آڈیٹوریم میں سنیچر کو محکمہ ٹریفک کی جانب سے’’ سڑک تحفظ ہفتہ‘‘ کے حوالے سے سمینار منعقد ہوا،جبکہ ڈپٹی کمشنر سرینگر ڈاکٹر شاہد چودھری نے اس سمینار کا فتتاح کیا۔سمینار میںمعروف اسلامی دانشور،مفتی نذیر احمد مہمان خصوصی تھے،جبکہ ایس ایس پی ٹریفک جاوید کول کے علاوہ ناظم سماجی بہبود،ایڈیشنل کمشنر،ہڈیو و جوڑوں کے ماہر معالج ڈاکٹر قانونگو،محکمہ تعلیم کے کلچر آفسر اور دیگر لوگوں نے سمینار سے خطاب کیا۔ سمینار کا انعقاد مختلف فریقین کو روڈ سیفٹی کو یقینی بنانے کے دوران درپیش مسائل کی راہیں تلاش کرنے اور ان مسائل و چیلنجوں کا مقابلہ کرنے کیلئے کیا گیا تھا۔ سمینار سے خطاب کرتے ہوئے مفتی نذیر احمد نے احادیث کی روشنی میں سڑکوں کے استعمال اور ٹریفک قوانین پر عمل درآمد کرنے پر روشنی ڈالی۔انہوں نے کہا کہ سماج کے ہر فرد پر یہ لازمی ہے کہ وہ ٹریفک حادثات سے بچنے کیلئے احتیاتی تدابیر پر عمل پیرا ہو اور دانستہ طور پر اپنی جانوں کو خطرے میں نہ ڈالے۔ ضلع ترقیاتی کمشنر سرینگر نے اس موقعہ پر لوگوں سے اپیل کی کہ وہ ٹریفک قوانین پر علمدرآمد کرکے اپنی اور دوسروں کی زندگی کو بچائے۔انہوں نے نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اس سمینار میں تمام فریق شامل ہوئے۔انہوں نے کہا کہ جب تک تمام فریق ٹریفک نظام کو بہتر بنانے میں شامل نہیں ہونگے،تب تک یہ بہتر نہیں ہوسکتا۔ ان کا کہنا تھا کہ ڈھانچے اور ٹریفک نظام کو بہتر کرنے کی ضرورت ہے وہی دیگر فریق جو اس سے جڑے ہوئے ہیں،  انہیں اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔ایس ایس پی ٹریفک جاوید احمد کول نے ابتدائی خطبہ میں ٹریفک نظام کے سماجی و معاشی مسائل کو اجاگر کرتے ہوئے ٹریفک حادثات میں زخمی ہوئے افراد کے اسپتالوں میں درپیش روداد پر تفصیلی روشنی ڈالی ۔انہوں نے تمام فریقین کو ٹریفک نظام بہتر بنانے میں اپنا کردار ادا کرنے پر زور دیا۔سمینار میں ٹریفک حادثات میں زخمی ہوئے کئی افراد نے بھی شرکت کی،جنہوں نے اپنی روداد بیان کرتے ہوئے کہا کہ اگر انہوںنے ٹریفک قوانین پر عمل درآمد کیا ہوتا تو شائد انہیں یہ دن نہیں دیکھنا پڑتا۔
 

تازہ ترین