اترپردیش میں نظربند21قیدیوں کوآگرہ منتقل کیا جائیگا

تاریخ    23 جنوری 2021 (00 : 01 AM)   


سرینگر//جموں وکشمیرکے لگ بھگ 21 نظر بندوں ، جو اس وقت اترپردیش کی مختلف جیلوں میں بند ہیں ، کو اعلی سیکورٹی کے حامل آگرہ جیل میں منتقل کیا جا رہا ہے۔یہ عمل وزارت داخلہ کے حکم پر کیا جارہا ہے۔ خیال کیا جاتا ہے کہ یہ قیدی علیحدگی پسند ہے ، جن میں سے 10 کا تعلق حریت(گ) سے ہیں۔ان نظر بندوں پر پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا گیا تھا اورانہیں اگست 2019 میں آئین کے دفعہ370 کے تحت سابق ریاست جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت منسوخ کرنے کے تناظر میں گرفتار کیا گیا تھا۔آگرہ سنٹرل جیل کے سینئر سپرنٹنڈنٹ کے مطابق’’ 8 قیدی پہلے ہی آگرہ سنٹرل جیل میں بند تھے ، مزید 17 کونینی ، بریلی اور امبیڈکر نگر جیلوں سے منتقل کیا جائے گا‘‘۔ان کا کہنا تھا کہ مزید چار افراد کو وارانسی سنٹرل جیل سے منتقل کیا جانا ہے،اوران سب کو دوسرے قیدیوں سے دور ایک اعلی سیکورٹی سیل میں رکھا جائے گا۔ان کا کہنا ہے کہ یہ پورا سیل ساؤنڈ پروف اور مستقل سی سی ٹی وی نگرانی ؎میں رہتا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ خصوصی سیل میں ڈیوٹی پر موجود جیل عملہ کو سختی سے ہدایت کی گئی ہے کہ وہ کسی بھی قیدی سے بات نہ کریں،جبکہ ضرورت پڑنے پر صرف سینئر افسراں ہی ان سے بات چیت کریں گے۔انہیں روزانہ ایک مقررہ وقت پر ایک ایک کرکے لاک اپ سے باہر لے جایا گا اور چند منٹ تک چہل قدمی کی اجازت دی جائے گی۔
 

تازہ ترین