تازہ ترین

ڈوڈہ ضلع کے بیشتر علاقوں میں پینے کے صاف پانی کی قلت

متعدد سکیمیں ناکارہ، اکثر دیہات میں نل منجمد، محکمہ جل شکتی کی عدم توجہی پر عوام برہم

تاریخ    19 جنوری 2021 (00 : 01 AM)   


ڈوڈہ //ڈوڈہ ضلع کے بیشتر دیہات میں جہاں منفی درجہ حرارت کی وجہ سے نل منجمد ہو گئے ہیں جس کے نتیجے میں مقامی آبادی کوپینے کے صاف پانی کی قلت کا سامنا کرنا پڑرہا ہے وہیں متعدد علاقوں میں پانی کی سکیمیں عرصہ دراز سے ناکارہ ہوئیں ہیں اور محکمہ جل شکتی کی عدم توجہی سے سینکڑوں نفوس پر مشتمل آبادی کو مشکلات سے دوچار ہونا پڑ رہا ہے۔ ڈوڈہ، گھٹ ،گندنہ ،چرالہ ،فیگسو ،کاہرہ بھٹولی ،بھالہ ،بھدرواہ ، مرمت ،بھاگواہ و بھلیسہ ،بونجواہ سے کئی وفود نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ محکمہ جل شکتی کی عدم توجہی سے انہیں پانی کی کمی کا سامنا ہے۔کاہرہ کی پنچائت بھٹولی میں مقامی لوگوں نے محکمہ کے خلاف احتجاج بلندکرتے شدید نعرہ بازی کی۔ طارق حسین، ثمیہ تبسم و عطیش کمار نے کہا کہ پچیس گھروں پر مشتمل بھٹولی پنچائت میں پینے کے صاف پانی کی قلت سے عورتوں و بچوں کو کوسوں دور جاکر پانی لانا پڑتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پانی کی سکیم ناکارہ ہوئی ہے اور متعدد بار متعلقہ محکمہ سے رجوع کیا لیکن کوئی عمل درآمد نہیں کیا گیا۔ٹھاٹھری سے ممبر پنچائت پرویز احمد نے کہا کہ جہاں بیشتر علاقوں میں منفی درجہ حرارت کی وجہ سے پانی کے نل منجمد ہو گئے ہیں وہیں بیشتر سکیمیں ناکارہ ہوئیں ہیں اور محکمہ ان کی مرمت میں تاخیر کررہا ہے۔اس دوران ڈی ڈی سی ممبر معراج الدین ملک نے ضلع و مقامی انتظامیہ سے مطالبہ کیا ہے کہ ضلع کے شہر و گام میں پانی کی قلت کو دور کرنے کے لئے سکیموں کی مرمت کی جائے تاکہ عوام کو راحت مل سکے۔
 

تازہ ترین