تازہ ترین

لاوے پورہ جھڑپ کے مہلوکین ملی ٹنسی سے وابستہ تھے، متعلقہ گھرانوں کو ٹھوس ثبوت دیں گے:آئی جی پی

تاریخ    18 جنوری 2021 (33 : 02 PM)   


نیوز ڈیسک
سرینگر//انسپکٹر جنرل آف پولیس، کشمیر رینج وجے کمار نے پیر کو کہا کہ لاوے پورہ معرکہ آرائی میں مارے گئے تینوں نوجوان جنگجو تھے اور پولیس عنقریب اُن کے والدین کو اس سلسلے میں ”ٹھوس شواہد‘ فراہم کرے گی۔
انہوں نے مزید کہا کہ مہلوکین کی باقیات کو کورونا کی وجہ سے ورثاءکے حوالے نہیں کیا جائے گا بصورت دیگر لوگ اُن کی تجہیز و تکفین کیلئے جمع ہوکر کورونا پروٹوکول کی خلاف ورزی کریں گے۔
نامہ نگاروں کے ساتھ بات کرتے ہوئے آئی جی کشمیرنے کہا”ہم نے لاوے پورہ معرکہ آرائی کے بارے میں60فیصد شواہد جمع کئے ہیں اور آئندہ دنوں میں مزید شواہد جمع کرکے اس بات کو ثابتکیا جائے گا کہ مہلوکین جنگجوﺅں کے اعانت کار تھے“۔
انہوں نے کہا کہ مہلوکین میں سے ایک کے گھروالوں نے لاش کا مطالبہ کیا ہے لیکن ان کا مطالبہ پورا نہیں کیا جائے گا۔
یاد رہے کہ لاوے پورہ سرینگر میں 30دسمبر2020کو ایک معرکہ آرائی کے نتیجے میں پولیس کے مطابق جنوبی کشمیر کے تین جنگجو جاں بحق ہوگئے۔ مہلوکین کے والدین تاہم اس کو ”فرضی جھڑپ“ قرار دیتے ہوئے تحقیقات کا مطالبہ کررہے ہیں۔مذکورہ گھرانوں نے کئی بار اپنے مطالبے کے حق میں احتجاج کرتے ہوئے لاشوں کا مطالبہ بھی کیا۔
آئی جی کشمیر نے 26جنوری کی تیاریوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ جنگجو وں کی سرگرمیوں کو ناکام بنانے کیلئے سبھی انتظامات کئے گئے ہیں۔
 

تازہ ترین