گگن گیرسونہ مرگ میں سیاحوں کارش | سہولیات کے فقدان کی وجہ سے سیلانیوں کو مشکلات کا سامنا

تاریخ    18 جنوری 2021 (00 : 12 AM)   


غلام بنی رینہ
کنگن//حالیہ برف باری کے بعد موسم خوشگوار ہونے کے ساتھ ہی سونہ مرگ میں غیرریاستی سیاحوں کے رش میں اضافہ ہوا ہے جس کی وجہ سے سیاحت سے وابستہ افراد میں خوشی کی لہردوڑ گئی ہے تاہم سونہ مرگ میں سہولیات کے فقدان کی وجہ سے سیاحوں کو مشکلات کا سامنا ہے۔اگرچہ بھاری برف باری کے بعد سونہ مرگ کو انتظامیہ نے گزشتہ سال ماہ دسمبر میں ٹریفک کی آمدورفت کو بند کیا تاہم گگن گیر تک سیاحوں کی آمد ورفت جاری ہے۔سونہ مرگ ڈیولپمنٹ اتھارٹی جس کا قیام سال2007میں عمل میں لایا گیا اورسونہ مرگ میں پارکیں اور ریسٹورنٹ قائم کئے گئے تاہم اتھارٹی کی طرف سے گگن گیر میں سیاحوں کی سہولیت کیلئے کوئی انتظام نہیں کیا گیا ہے ،جس کی وجہ سے سیاحوں کو یہاں کھانے پینے اور حاجت بشریٰ کیلئے مشکلات کاسامنا کرنا پڑرہا ہیں۔سیاحتی شعبے سے وابستہ مقامی لوگوں کو کہنا ہے کہ اگرچہ سونہ مرگ ڈیولپمنٹ اتھارٹی نے گگن گیر کے مقام پرایک پارک اور ریسٹورنٹ قائم کئے تاہم اس ریسٹورنٹ کو بندرکھاگیا ہے جس کی وجہ سے یہاں آنے والے سیلانیوں کو کھانے پینے اور دیگر سہولیات کے نہ ہونے سے مشکلات پیش آتی ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ لاکھوں روپے کی لاگت سے تعمیر کئے گئے اس ریسٹورنٹ کواستعمال میں کیوں نہیں لایا جارہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اگر اس ریسٹورنٹ کو چالوکیاجاتا تو اس سے نہ صرف سونہ مرگ ڈیولپمنٹ اتھارٹی کو آمدن حاصل ہوتی بلکہ  یہاں آنے والے سیاحوں کو بھی کھانے پینے کے لئے مشکلات پیش نہیں آتی۔سیاحت شعبے سے وابستہ افراد کا کہنا ہے کہ ہر سال بھاری برفباری کے بعد سیاحتی مقام سونہ مرگ کو نومبر یا دسمبر میں آمدورفت کے لئے بند کیا جاتا ہے جس کے بعد سیاحوں کی آمدورفت گگن گیر تک ہی جاری رہتی ہے۔
 

تازہ ترین