تازہ ترین

کشمیریونیورسٹی میں دوہفتہ طویل سائنس ریفریشر کورس ختم

سائنسی ایجادات نے انسانی زندگی کو آرام دہ اور آسان بنایا:ڈاکٹر آہنگر

تاریخ    16 جنوری 2021 (00 : 01 AM)   


سرینگر//سائنس اورٹیکنالوجی میں مسلسل ترقی اور ایجادات نے کرہ ارض پرانسانی زندگی کوآرام دہ اورآسان بنایا ہے۔اس بات کااظہار شیرکشمیر انسٹی چیوٹ آف میڈیکل سائنسزصورہ کے ڈائریکٹر ڈاکٹر اے جی آہنگر نے کشمیر یونیوسٹی میں کالج اور یونیورسٹی اساتذہ کیلئے دوہفتوں طویل سائنس ریفریشر کورس کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ طبی سائنس نے لاکھوں لوگوں کی جانیں بچائی ہیں ۔ہمیں آکسیجن کے مالیکیول کے پیچ کے بارے میں کبھی سوچابھی نہیں ہوگا لیکن اس عالمگیر وباء کے دوران ہمیں اس بات کا پتہ چل گیا کہ ہماری بقاء کیلئے یہ کتناضروری ہے۔یہ سب سائنس کی ایجادات سے ہی ممکن بنا۔انہوں نے کہا کہ دنیا نے کوروناوائرس کی بدترین عالمگیر وباء کی صورتحال دیکھی لیکن یہاں بھی سائنس نے ہی سب کچھ آسان بنایا۔ڈاکٹر آہنگر نے بتایا کہ کووِڈ- 19نے پوری دنیا کو خوف ذدہ کیالیکن ہم نے اسے سائنس سے ہی مسخر کیا۔آج(16جنوری) وزیراعظم کووِڈ ٹیکہ کو ای لانچ کریں گے ۔یہ سب سائنس اور ٹیکنالوجی کی بدولت ہی ممکن ہوااورہم ایک برس میں ہی یہ ٹیکہ تیار کرنے میں کامیاب ہوئے۔ سائنس کے صحیح استعمال پرزوردیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم جتنا سائنس کو اپنائیں گے ،ہماری زندگی اتنی ہی بہتر ہوگی۔انہوں نے کہا کہ سائنس کے فائدے ہی فائدے ہیں لیکن اس کا ناجائز استعمال کئے جانے کا بھی خطرہ ہے اور اس کے فائدوں کو غلط استعمال بھی ہوسکتا ہے۔اس لئے بنی نوع انسان پر لازم ہے کہ وہ جتنا ہوسکے اتنا کھوج لگائیں اور وہ کھوج سائنس ہے۔اس موقعہ پرڈین آف کالجز پروفیسر جی ایم سنگمی جو مہمان ذی وقارتھے ،نے کہاکہ نوجوان سائنس دانوں پر لازم ہے کہ وہ مشکلات کا حل ڈھونڈیں جن کا بن نوع انسانی کو سامنا ہے۔ اس کورس کا افتتاح کشمیر یونیورسٹی کے وائس چانسلرپروفیسرطلعت احمد نے2جنوری کو کیاتھا۔دوہفتوں تک جاری اس کورس میں جموں کشمیر اورباہرکے76کالج اور یونیورسٹی اساتذہ نے شرکت کی ۔