تازہ ترین

سرینگر جموں شاہراہ | کیلا موڑ بیلی برج تقریباً تیار

عارضی پل اتوار کو کھولا جائیگا، آج گاڑیوں کی آزمائش ہوگی

تاریخ    16 جنوری 2021 (00 : 01 AM)   


محمد تسکین
بانہال // جموں سرینگر شاہراہ پر کیلاموڑ کے مقام پربیلی برج بنانے کا کام 90فیصد مکمل کیا گیا ہے اور پل کو اتوار کے روز استعمال کرنے کا امکان ہے۔لوہے کے پل پر آج سہ پہر کو آزمائشی طور پر گاڑیاں چلائی جائیں گی۔اس دوران شاہراہ گذشتہ 5روز سے مکمل طور پر بند پڑی ہے اور رام بن سے نگروٹہ تک مختلف مقامات پر قریب 4000مال بردار گاڑیاں در ماندہ ہیں ، جبکہ قاضی گنڈ میں پچھلے 15روز سے گاڑیاں کھڑی ہیں۔چیف انجینئر بیکن بریگیڈیئر آئی کے جھگی ، ڈپٹی کمشنر رام بن ناظم زئی خان اور پروجیکٹ ڈائریکٹر نیشنل ہائی وے اتھارٹی آف انڈیا پرشوتم کمار نے جمعہ کو کیلاموڑ کے مقام بارڈر روڈ آرگنائزیشن کی طرف سے بیلی پل کی تعمیر کا جائزہ لیا۔اس موقعہ پر ڈپٹی کمشنر نے میڈیا کو بتایا کہ پل کا کام تقریباً مکمل کیا گیا ہے اور اب صرف لوہے کی چادریں پل کے ڈھانچے پر ڈالنا باقی ہیں، جنہیں سنیچر کی سہ پہر تک مکمل کیا جائیگا۔انہوں نے کہا کہ سہ پہر کے بعد بیلی برج پر آزمائشی طور پر گاڑیاں چلائی جائیں گی اور آزمائش کے بعد اتوار سے باضابطہ طور پر گاڑیوں کی آمد و رفت کو ممکن بنایا جائیگا۔اس موقعہ پر بیکن کے چیف انجینئر نے بتایا کہ بیلی برج کی لمبائی120فٹ اور چوڑائی 20فٹ کے قریب ہے۔ انہوں نے کہا کہ لوہے کی پلیٹیں ڈالنے کے بعد پل قابل آمد و رفت بنے گا لیکن اس پر یکطرفہ ٹریفک ہی چلے گا۔انہوں نے کہا کہ 5روز قبل اتوار کو کیلا موڑ پل کیساتھ منسلک سڑک کے حصے پر بھی کام جاری ہے اور ابھی تک اس پر کنکریٹ کا کام لگ بھگ 50فیصد مکمل کیا گیا ہے لیکن ابھی 15دن اس کی بحالی پر لگنے کا امکان ہے۔انہوں نے کہا کہ سڑک کی دیوار گھڑا کرنے کی کوشش ہورہی ہے۔ادھر ٹریفک پولیس نے کہا ہے کہ شاہراہ بند ہونے سے سرینگر جانے والی ہزاروں مال بردار گاڑیاں درماندہ ہیں۔انہوں نے کہا کہ رام بن، ادہمپور،دھار روڑ، نگروٹہ اور دیگر مقامات پر قریب 4000مال بردار گاڑیاں درماندہ ہیں۔قاضی گنڈ میں بھی سینکڑوں کی تعداد میں گاڑیاں رکی پڑی ہیں۔