تازہ ترین

وادی کے شبانہ درجہ حرارت میں معمولی بہتری| شدید ٹھنڈ اور گہری دھند

سرینگر میں منفی 7.8،دراس میںمنفی 25ریکارڈ،21جنوری تک موسم سرد رہیگا

تاریخ    16 جنوری 2021 (00 : 01 AM)   


اشفا ق سعید
 سرینگر //یخ بستہ ہوائوں اور شدید ٹھنڈ میں آئندہ چند روز کے دوران معمولی کمی آنے کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے۔سرینگر میں جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب درجہ حرارت میں معمولی بہتری دیکھی گئی اوردرجہ حرارت منفی 7.8ریکارڈ کیا گیا،جو ایک روز قبل ریکارڈ کیا گیا۔محکمہ موسمیات کے ڈائریکٹر سونم لوٹس نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ اس بات کا اندازہ ہے کہ آئندہ چند روز کے دوران رات کے دوران بادل ہونگے جس سے درجہ حرارت میں بہتری آسکتی ہے۔ تاہم انکا کہنا تھا کہ اس سال چلہ کلان میں ریکارڈ توڑ سردی کی پہلے ہی پیش گوئی کی گئی تھی اور اب چونکہ جنوری کے 15دن گذر گئے ہیں لہٰذا  درجہ حرارت منفی 6اور 7کے درمیان رہنے کا امکان ہے۔ سونم لوٹس نے کہا کہ21جنوری تک موسم خشک رہے گا اور22سے 24جنوری تک بالائی اور میدانی علاقوں میں ہلکی بارشوں کے ساتھ ساتھ درمیانہ درجہ کی برف باری ہوسکتی ہے ۔انکا کہنا تھا کہ21جنوری تک کڑاکے کی ٹھنڈ سے کشمیر وادی کے لوگوں کو راحت ملنے کا کوئی بھی امکان نظر نہیں آرہا ہے۔ جمعرات اور جمعہ کی درمیانی رات بھی وادی شدید ٹھنڈ کی لپیٹ میں رہی اور شہر میں رات کا کم سے کم درجہ حرارت منفی  7.8ڈگری سیلسیش ریکارڈ کیا گیا ،اگرچہ یہ گذشتہ شب کے مقابلے میں 0.8ڈگری سیلسیش کم تھا لیکن سردی کی شدت برقرار تھی اور صبح کے وقت اس قدر دھند چھائی ہوئی تھی کہ چند میٹروں کی دوری پر موجود چیز کو دیکھنا بھی ممکن نہیں تھاجبکہ گاڑیوں کو ہیڈ لائٹس کے سہارے چلنا پڑا۔اس سے قبل کی رات شہر میں کم سے کم درجہ حرات منفی 8.4ڈگری سیلسیش ریکارڈ کیا گیاتھا جس نے 29سالہ ریکارڈ توڈ دیا تھا ۔صرف شہر سرینگر ہی نہیں بلکہ وادی بھر میں شدید سردی نے لوگوں کی ناک میں دم کر دیا ہے اور وہاں پر بھی صبح کے وقت پانی کے نل جم جاتے ہیں اور آبی زخائر بھی منجمد ہو جاتے ہیں۔ صبح 12بجے تک لوگ پانی کا انتظار کرتے رہتے ہیں لیکن انہیں پانی کا ایک قطرہ نصیب نہیں ہوتا ۔ جنوبی کشمیر کے قاضی گنڈ علاقے میں رات کا کم سے کم درجہ حرارت منفی 8.3ڈگری سیلسیش ریکارڈ کیا گیا ، اسی طرح سیاحتی مقام پہلگام میں درجہ حرارت منفی 8.6 ، سرحدی ضلع کپوارہ میں منفی 5.7 ، کوکرناگ میں منفی8.4،  گلمرگ میں منفی 5.5ریکارڈ کیا گیا ہے ۔ اونتی پورہ میں منفی 11، اننت ناگ میں منفی 8.3، بانڈی پورہ میں منفی 4.8، سوپور میںمنفی4.8، شوپیاں میں منفی11.0، پلوامہ میں منفی8.4، کولگام میں منفی8.7 ڈگری سلیش ریکارڈ کیا گیا  ۔ادھر خطہ لداخ میں بھی شدید سردی پڑ رہی ہے جس کے سبب لوگوں پریشان ہیں لداخ کے لہیہ علاقے میں منفی11.6ڈگری ، کرگل میں منفی 17.6 ڈگری ، جبکہ دراس میں منفی25ڈگری سلسیش ریکارڈ کیا گیا ہے ۔

دھند سے حدنگاہ متاثر 

شہر سمیت وادی کے مختلف علاقوں میں جمعہ کی صبح دھند کی وجہ سے حدنگاہ متاثر رہی جس کے نتیجے میں سرینگر بین الاقوامی ہوائی اڈہ پر ایک پرواز 15منٹ کیلئے تاخیر کا شکار ہوئی وہیںصبح کے وقت گاڑیوں کو ہیڈلائٹس آن کر کے چلنا پڑا ۔محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ آنے والے دنوں میں صبح اور شام کچھ وقت کیلئے دھند چھائی رہے گی ۔ جمعہ کی صبح شہر سرینگر سمیت وادی کے اکثر علاقوں میں شدید دھند سے ہر شے دھندلا گئی، شہر میں صبح تک دھند کے بادل چھا گئے تھے، ہر منظر دھندلا گیا۔ جھیل ڈل ، جہلم اور دیگر آبی زخائر کے آس پاس حد نگاہ انتہائی کم رہنے سے شہریوں کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔شہر کی سڑکوں سمیت وادی کے تمام اضلاع کی سڑکوں پر شدید دھند سے ٹریفک کی روانی متاثر ہوئی۔اس طرح صبح کے وقت چلنے والی یخ بستہ ہوائوں اورگہری دھند چھانے کے باعث صبح کے وقت زیادہ ترلوگ گھروں سے باہرنہیں آئے ۔ روشنی کم ہونے کی وجہ سے گاڑیوں کی ہیڈلائٹس چالو رکھنا پڑیں اور گاڑیوں کی بہت کم تعداد سڑکوں پر نظر آئی۔ سرینگر ائرپورٹ اتھارٹی کے ڈائریکٹر نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ صبح کے وقت ائرپورٹ پر بھی کافی دھند چھائی رہی جس کے سبب ایک پرواز 15منٹ کیلئے تاخیر کا شکار ہوئی ۔