یومیہ اُجرت پر کام کرنے والوں کی مستقلی | ’جعلی نوٹیفیکشن‘ کے پس پردہ افسروں کے خلاف کارروائی کا امکان | کیا بے روزگار تعلیم یافتہ نوجوانوں کو نظر اندازکریں:حکام

تاریخ    14 جنوری 2021 (00 : 01 AM)   


سیدامجد شاہ
جموں// محکمہ خزانہ نے جموں وکشمیرمیں آٹھ محکموں میں یومیہ اجرت پر کام کرنے والے ورکروں کومستقل بنانے کے ’جعلی نوٹیفیکشن ‘ کاسنجیدہ نوٹس لیا ہے۔ 11 جنوری 2021 کی محکمہ خزانہ کی نوٹیفیکشن کا سوشل میڈیا پرزبردست چرچاتھا جس میں کہاگیا تھاکہ تیسری ایمپاورمنٹ کمیٹی کی5دسمبر2020کو ہوئی میٹنگ میں آٹھ محکموں میں کام کررہے یومیہ اُجرت پرکام کرنے والے ورکروں کو مستقل کیا گیا ہے جس کی فہرست 28 جنوری 2021سے پہلے منظر عام پرآئے گی ۔ایک اعلیٰ افسر نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ یہ نوٹیفیکیشن جعلی ہے ۔اس کے پیچھے جولوگ ہیں ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی ۔ہم ایسے حکام کے خلاف ایکشن لیں گے جو سیکریٹریٹ میں کورپشن کے عمل کوجاری رکھنا چاہتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ یومیہ اُجرت پر کام کرنے والوں کی کثیر تعداد کاچوردروازے سے تقرر کیا گیا تھا اسلئے جن حکام نے ایسی تقرریاں کیں تھی ،حکومت کے قواعد کے تحت کام کرنے کونہیں چاہتے۔ افسر نے کہا کہ وہ(حکومت )یومیہ اجرت پر کام کرنے والوں کیخلاف نہیں ہے ،لیکن ’’کیا آپ چاہتے ہیں کہ ہم تعلیم یافتہ بے روزگار نوجوانوں کو روزگار میںنظر انداز کریں اور یکا یک جموں کشمیرمیں یومیہ اُجرت پر کام کرنے والوں کو مستقل بنائیں۔اس کیلئے کچھ پیمانے ہونے چاہیے‘‘۔یہ پوچھے جانے پر کہ کیا ان کی مستقلی کا کوئی منصوبہ ہے،تو اس سینئر افسر نے کہا،’’یومیہ اُجرت پر کام کرنے والوں کو ماہانہ ان کی اُجرتیں دی جاتی ہیں ۔ان کے مسائل کو حل کرنے کیلئے ہم نے کام کیا ہے ۔متعددیومیہ اُجرت پر کام کرنے والے متعددسرکاری افسروں کے گھروں میں کام کرتے ہیں ،کچھ دکان چلاتے ہیں اورڈیوٹی سے غیرحاضر رہتے ہیں اس لئے ہم نے نظام کو باضابطہ بنانے کیلئے کچھ قدم اُٹھائے ہیں اور ان کی تعیناتیوں کی جگہوں پرحاضری کو یقینی بنایا ہے‘‘۔انہوں نے مزیدکہا کہ اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ یومیہ اجرت پر کام کرنے والے سبھی اپنی تعیناتیوں کی جگہوں پرحاضر نہیں ہوتے تھے،تاہم ہم نظام کو باضابطہ بنانا چاہتے ہیں ۔ہم ان کے ساتھ تعاون کررہے ہیں۔قابل ذکر ہے کہ جموں کشمیرمیں یومیہ اجرت پر کام کرنے والوں اور کیجول مزدوروں نے اپنی مستقلی  اور اجرتوں کی واگزاری کو لیکر احتجاج شروع کیاتھا۔
 

تازہ ترین