تازہ ترین

جموںکشمیرمیں نئے جیل مینول کی ترتیب | تازہ رپورٹ پیش کرنے کی ہائی کورٹ کی ہدایت

تاریخ    5 دسمبر 2020 (00 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک
جموں //چیف جسٹس ،جسٹس گیتا متل اورجسٹس پنیت گپتاپر مشتمل جموں کشمیر ہائی کورٹ کی ایک ڈویژن بنچ نے جیل مینول ترتیب دینے کیلئے مفاد عامہ کی ایک عرضی پر جیل مینول کے بارے میں تازہ جانکاری عدالت میں پیش کرنے کیلئے حکومت کو آٹھ ہفتوں کی مہلت دی ہے اوربصورت دیگر مرکزی زیرانتظام علاقہ جموں کشمیرکے داخلہ محکمہ کے پرنسپل سیکریٹری عدالت میں اگلی سماعت کے روز خود حاضر ہوں گے ۔مفاد عامہ کی عرضی پرسماعت کے دوران ڈویژن بنچ نے کہا کہ سینئر ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل بی اے ڈار نے ایک بار پھر یہ کہہ کر التواء کی درخواست کی ہے کہ جیل مینول کی تیاری آخری مراحل میں ہے.۔ عدالت نے کہا کہ یہ معاملہ دوبرس سے زیرسماعت ہے اور اس میں کوئی اختلاف نہیں ہے کہ موجودہ جیل مینول پرنظر ثانی کی ضرورت ہے جس میں ترامیم کی گئی ہیںاور سینئرایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل کو ہدایت دی کہ وہ جیل مینول کی تازہ ترین رپورٹ آٹھ ہفتوں میں عدالت کے سامنے رکھیں  بصورت دیگر محکمہ داخلہ کے پرنسپل سیکریٹری اگلی پیشی پر عدالت میں خود حاضر رہیںگے ۔  لداخ مرکزی زیرانتظام علاقہ کے خصوصی وکیل ٹی ایم شمسی نے عدالت سے مہلت طلب کرتے ہوئے کہا کہ مرکزی زیرانتظام علاقہ لداخ میں جیل مینول جو لاگو ہوگا،اُسے ترتیب دینے سے قبل مرکزی زیرانتظام علاقہ لداخ کی حکومت دیگر ریاستوں اور مرکزی زیرانتظام علاقوں کے جیل مینولوں کاجائزہ لے رہی ہیں ۔