مسافرکرایہ میں 30فیصد اضافہ کا فیصلہ منسوخ

پرانا کرایہ لینے کی سخت ہدایات جاری

تاریخ    2 دسمبر 2020 (00 : 01 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر/حکومت نے وبائی بیماری کورونا وائرس کے پیش نظرجموں کشمیر میں ٹرانسپورٹ کرائیوں میں30فیصد اضافے کے احکامات کو واپس لے لیا اور پہلے والے کرایہ کا نفاذ عمل میں لانے کی سخت ترین ہدایات دی ہیں۔اس سلسلے میں منگل کوکمشنر سیکریٹری ٹرانسپورٹ ہردیش کمار نے ایک حکم نامہ زیر نمبر 62-JK(TR) of 2020محررہ یک دسمبر2020جاری کیا، جس میں 30فیصد کرایہ کی منظوری کے احکامات کو کالعدم قرار دیا گیا۔ حکم نامہ میں کہا گیا ’’حکومت کی جانب سے وبائی بیماری کورونا وائرس کے نتیجے میںمسافر بردار گاڑیوں میں  نصف  نشستوں پر  مسافروں کو سفر کرانے کے سلسلے میں 22 جون2020 کے تحت تسلیم شدہ کرائیوں میں جو30فیصد کا اضافہ کیا گیا تھا، اس فیصلے کو منسوخ کیا جاتا ہے‘‘۔ حکم نامہ میں کہا گیا ہے کہ اس تناظر میں صرف تسلیم شدہ کرایہ(جوپہلے والے سرکاری احکامات کے تحت کرایہ تھا) ہی مسافروں سے وصول کیا جائے گا۔کمشنر سیکریٹری ٹرانسپورٹ نے متنبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ کسی بھی طرح کی خلاف ورزی کرنے والے کے خلاف سختی کے ساتھ موٹر وہیکلز ایکٹ مجریہ1988 اور مرکزی موٹر وہیکلز رولز مجریہ1989کے دفعات کے تحت کارروائی کی جائیگی۔
 

تازہ ترین