تازہ ترین

نیوزی لینڈ میں سیمنگ وکٹوں کی توقع، زیادہ محنت کرنا ہوگی، اظہر

تاریخ    1 دسمبر 2020 (00 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک
آکلینڈ/اسد شفیق کو نیوزی لینڈ کے دورے سے ڈراپ کرنے کے بعد اب پاکستانی بیٹنگ کا زیادہ تر بوجھ اظہر علی کے کاندھوں پر ہے۔ انہوں نے اپنے آخری ٹیسٹ میں انگلینڈ کے خلاف سنچری بنائی لیکن نیوزی لینڈ کے دورے میں انہیں قیادت سے محروم کردیا گیا۔ اس کے باوجود اظہر علی ٹیسٹ سیریز میں پاکستان کی جیت میں کردار ادا کرنا چاہتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ بطور سینئر ٹیم کی کارکردگی میں اہم کردار ادا کرنا ہدف ہے۔میڈیا سے  بات کرتے ہوئے اظہر علی نے کہا کہ وہ نیوزی لینڈ میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرنے کی ہر ممکن کوشش کریں گے۔ وہ موجودہ ٹیم میں ایک سینئر کرکٹراور اس ذمہ داری سے بخوبی واقف ہیں۔ دائیں ہاتھ کے35 سالہ اظہر علی81 ٹیسٹ میں17سنچریوں کی مدد سے6129 رنز بنا چکے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ماضی کے برعکس نیوزی لینڈ کی ٹیم اب ایشین ٹیموں کی آمد پر بولنگ پچز بناتا ہے، لہٰذا ہمیں زیادہ محنت کرنی ہوگی، نیوزی لینڈ کی موجودہ ٹیم بہترین بولرز اور تجربہ کار کھلاڑیوں پر مشتمل ہے۔ دونوںٹیموں کے مابین اچھا مقابلہ دیکھنے کو ملے گا، انہوں نے کہا کہ ماضی میں تو نیوزی لینڈ میں پچ پر زیادہ گھاس نہیں ہوتا تھا مگر اب ہم توقع کررہے ہیں کہ وہ سیمنگ کنڈیشنز کے لیے مفید پچ بنائیں گے۔ تفصیلات کے مطابق نیوزی لینڈ میں موجود پاکستانی اسکواڈ کی تیسری کوویڈ 19 ٹیسٹنگ مکمل ہوگئی۔ دوہسٹارک کیسزکے حامل ارکان کودوبارہ اسکواڈ جوائن کرنے کی اجازت دے دی گئی ہے۔میڈیا رپورٹ کیمطابق یہ کرکٹر محمد عباس اور سرفراز احمد ہیں۔طبی طور پر ان دونوں ارکان کو نان انفیکشیس قراردیا گیا ہے۔ یہاں لیے گئے پہلے کوویڈ 19 ٹیسٹ میں چھ ارکان کے رزلٹ مثبت آئے تھے۔ ان چھ میں سے دو اراکین کو ہسٹارک کیسزقراردیا گیا تھا۔نیوزی لینڈ میں موجود پاکستانی کرکٹرز اوراسپورٹ اسٹاف کی ہوٹل سے متصل گراؤنڈ میں چہل قدمی اور ہلکی پھلکی ٹریننگ جاری ہے۔پی سی بی پرامید ہے کہ کوویڈ 19 کے آج ہونے والے ٹیسٹ کے نتائج کے بعد پاکستانی اسکواڈ کو گراؤنڈ میں ٹریننگ کی اجازت مل جائے گی۔