تازہ ترین

مزید خبرں

تاریخ    29 نومبر 2020 (00 : 01 AM)   


ٹنگمرگ  میں 100 سالہ خاتون نے ووٹ ڈالا

فیاض بخاری 
بارہمولہ //ضلع ترقیاتی کونسل (ڈی ڈی سی) کے انتخابات کے پہلے مرحلے میں سنیچر کو ٹنگمرگ بارہمولہ میں ایک سو سالہ خاتون اپنا حق رائے دہی استعمال کرنے کیلئے  ایک پولنگ اسٹیشن پر قطار میں کھڑی تھیں۔ نادری گنڈ علاقے میں پولنگ بوتھ کے باہر 100 سالہ زائنہ بیگم نے کہا مجھے امید ہے کہ میرا ووٹ اس بار تبدیلی لائے گا ، "بیگم نے کہا کہ وہ پچھلے کئی سالوں سے ووٹ ڈال رہی ہیں۔ انہوں نے کہا ، "لیکن اس بار میں نے اس اس لئے ووٹ ڈالہ ہے کہ ہم ڈی ڈی سی امیدواروں سے براہ راست رابطے میں رہیں گے اور وہ ہماری شکایات اعلی حکام تک لے جاسکتے ہیں۔"بیگم نے کہا ، "اسمبلی انتخابات میں اکثر اوقات ہم وزراتک پہنچنے سے قاصر رہتے ہیں لیکن یہ رائے دہندگان بہت مختلف ہیں ،" انہوں نے کہا کہ میں نے آزاد امیدوار کو ووٹ ڈلا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمارا علاقہ بنیادی سہولیات سے محروم ہیں۔اسی لئے میں نے ووٹ کا استعمال کیا ہے تاکہ کہ اس طرح کے معاملات پر بھی توجہ دی جائے۔
 

ترال کے دیہی علاقوں میں انتخابی سرگرمیاں

سرینگر//جنوبی کشمیر کے ترال کے دیہی علاقوں میں گزشتہ کئی روز سے انتخابی ریلیوں کا سلسلہ جاری ہے ۔اس دوران آزاد امیدوار محمد یاسین پسوال نے متعدد علاقوں کا دورہ کر کے کئی عوامی ریلیوں سے خطاب کیا ہے ۔ کے این ایس کے مطابق سب ضلع ترال میں انتخابی ریلیوں کا سلسلہ بڑے پیمانے پر جاری ہے جہاں مختلف پارٹیوں کے امیدواراور آزادامیدوارووٹروں کو ان کے آبائی علاقے میں درپیش مشکلات کے ازالے کے لئے ووٹ مانگ رہے ہیں ۔ اس دوران جموں و کشمیر گوجر بکروال کانفرنس کے جنرل سیکریٹری  چودھری محمد یاسین پسوال جو آزاد امید وار کے طور میدان میں اُترے ہیں، نے پنیر جاگیر ،ناگہ بل دودھ مرگ،زاجی کھوڈ،وزل کلناڈ علاقوں کا دورہ کر کے ووٹروں کو اپنے طرف راغب کرنے کی کوشش کی ۔ پسوال نے لوگوں کو بتایا کہ وہ اپنا ووٹ ضائع نہ کریں بلکہ اُس اُمیدوار کو اپنا ووٹ دیں جو آپ کے مشکلات کا ازالہ کر سکے ۔چودھری محمد یاسین پسوال نے بتایا جہاں گوجر بکروال طبقہ جموں و کشمیر میں فارسٹ رائٹ ایکٹ کو نافذ کرنے  کامنتظر ہیں ،وہیں دوسری جانب ترال میں گوجر بکروال طبقے کو نوٹس جاری کرنے کا سلسلہ جاری ہے جس کی وجہ سے یہاں کے گوجر لوگ سخت پریشانیوں میں مبتلا ہیں۔
 

پولنگ مرحلہ اول

سرینگر//ضلع ترقیاتی کونسل انتخابات کے پہلے مرحلے میں کشمیرمیں ناقابل یقین پولنگ ہوئی اورلوگوں نے جوش وخروش سے اس میں حصہ لیا ۔مجموعی طور جموں کشمیر میں52.1فیصد پولنگ ہوئی اور7.01لاکھ ووٹروں میں سے3.65لاکھ ووٹروں نے اپنے حق رائے دہی کااستعمال کیا۔کشمیرمیں مجموعی پولنگ41.45فیصد رہی ۔ایک ہفتہ قبل کسی کے وہم وگمان میں بھی نہ تھا کہ اس طر ح کی پولنگ ہوگی ۔تقریباً90فیصد فرام پنچایتیں کام کاج کرنے والی ہیں ۔
 
 
 

طارق شبنم کو صدمہ، نانی انتقال کر گئیں

 

سرینگر//معروف افسانہ نگار اور ولر اردو ادبی فورم کے صدر طارق شبنم کی نانی اہلیہ مرحوم غلا احمد راتھر اجس بانڈی پورہ سنیچر کی صبح مختصر علالت کے بعد انتقال کر گئیں۔اس سلسلے میں ولر اردو ادبی فورم کے ممبران غلام رسول راتھر، عمران راتھر، جاوید احمد، مہتاب منظور، ظہور احمداور منظور لون نے طارق شبنم اور دیگر لواحقین کے ساتھ تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے مرحومہ کی جنت نشینی کیلئے دعا کی۔سماج کے مختلف طبقوں سے وابستہ افراد نے سوگوار کنبے بالخصوص طارق شبنم کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیاجن میں معروف افسانہ نگار ڈاکٹر ریاض توحیدی ، ڈاکٹر نذیر مشتاق،راجہ یوسف،بشیر اطہر ،کشمیر عظمی کے نمائندہ برائے بانڈی پورہ عازم جان ،گل تنویر خان ،ڈاکٹر بشارت خان ،ناظم وانی، نذیر جوہر اور ڈاکٹر شمس کمال انجم ، بشیر چراغ اورالطاف جمیل ندوی وغیرہ شامل ہیں۔
 

 اسداللہ آفاقی کو برسی پر خراج عقیدت 

کشمیر مرکز ادب و ثقافت کی طرف سے آن لائن تقریب کا اہتمام 

 
بڈگام// نامور قلمکار اور شیخ العالمؒ شناس بابا اسداللہ کو ان کی برسی پرخراج عقیدت پیش کیا گیا۔ کشمیر مرکز ادب و ثقافت چرار شریف کی طرف سے اس سلسلے میں ایک پر وقار آن لائن تقریب کا اہتمام کیا گیا جس میں جموں وکشمیر کے متعدد ادیبوں، قلمکاروں اور شاعروں نے شرکت کی۔ تقریب کی صدارت مرکز نور کشمیر یونیورسٹی کے سربراہ جی این خاکی نے کی جبکہ پروفیسر بشر بشیر اور غلام حسن طالب نے تقریب پر بالترتیب مہمان خصوصی اور مہمان ذی وقار کی حیثیت سے شرکت کی۔ تقریب میں جن دیگر ادبی شخصیات نے حصہ لیکر مرحوم اسداللہ آفاقی کو اپنا خراج عقیدت پیش کیا اُن میں مرکز ادب وثقافت کے صدر ڈاکٹر غضنفر علی غزل، تنظیم کے میڈیا ایڈوائزر مشتاق محرم، مشہور قلمکار علی احسن، غلام نبی ادفر، فقیر نثار احمد دلداراور لائف فائونڈیشن کے سرپرست اعلیٰ بابا نذرالاسلام وغیرہ شامل تھے۔
 

دارالعلوم ویری ناگ کا مالی تعان کے لئے

انجمن علماء و ائمہ مساجد کی عوام سے اپیل

 
سرینگر//انجمن علماء وائمہ مساجدجموں وکشمیر کے ایک وفد نے انجمن کے امیر حافظ عبد الرحمان اشرفی( مہتمم دارالعلوم سید المرسلین چوگام قاضی گنڈ) اور انجمن کے سیکریٹری جنرل مفتی شیرازاحمد قاسمی (مہتمم دارالعلوم رحمانیہ سلیالو) کی قیادت میں دارالعلوم سیدنا عمر فاروق رین چوگنڈ ویری ناگ میں حالات کا جائزہ لیا جہاںادارہ پچھلے دس برسوں سے محنت و مشقت کے ساتھ دینی ،اصلاحی اور تعلیمی خدمات انجام دے رہا ہے ۔ایک بیان کے مطابق مہتمم دارالعلوم مولانا محمد عارف قاسمی نے ایک دومنزلہ عمارت اور مسجد کے لئے ایک شیڈ تعمیر کیا تھا جسے اب سڑک اور پل کے درمیان میں آنے کی وجہ سے منہدم کیا اور سرکا ر نے بھی ابھی تک کوئی معاوضہ نہیں دیا جس کی وجہ سے ادارے میں مقیم طلبہ کو مختلف دشواریاں درپیش ہیں اور اس وقت کافی مقروض ہے ۔بیان میںانجمن علماء وائمہ مساجدسے وابستہ علماء وائمہ مساجد سے پرزور اپیل کی کہ آئندہ جمعہ کے موقعہ پر چندہ جمع کرکے دارالعلوم پہنچائیںیا فون پر ادارہ کے مہتمم سے رابطہ کریں۔بیان میں انجمن نے ضلع انتظامیہ سے بھی اپیل کی ہے کہ ادارے کا معاوضہ جلد از جلد اداکریں۔
 
 

کئی سیاسی کارکنوں کی  اپنی پارٹی میں شمولیت 

 
سرینگر//ضلع گاندربل سے بڑی تعداد میں کئی سیاسی کارکنوں نے اپنی پارٹی میں شمولیت اختیار کی۔ ایک بیان کے مطابق پارٹی دفترسرینگر میں ایک تقریب کے دوران ہلال احمد گنائی، شوکت احمد تانترے، شیخ بلال، عرفان احمد تانترے اور فردوس احمد تانترے نے پارٹی میں شمولیت اختیار کی جن کا پارٹی صدرسید محمد الطاف بخاری ، صوبائی سیکریٹری عبدالرشید ہارون، ضلع صدر سرینگر نور محمد شیخ، عرفان متو، خالد راٹھور، پرویز احمد بٹ، ظہور احمد گنائی اور فاروق احمد ڈار نے خیر مقدم کیا۔ الطاف بخاری نے پارٹی میں شامل ہونے والوں کاخیر مقدم کرتے ہوئے کہاکہ وہ اپنے اپنے علاقوں میں لوگوں کی فلاح وبہبودکے لئے کام کریں۔
 

شعری مجموعہ ’مقصد ذات‘ کی رسم رونمائی

 
سرینگر//مراز ادبی سنگم کی طرف سے باغ نوگام اننت ناگ میںمیڑے منظور کے پہلے شعری مجموعہ ’’مقصد ذات‘‘کی رسم رونمائی انجام پذیر ہوئی۔ کتاب کی رسم رونمائی کا فریضہ مراز ادبی سنگم کے صدر ریاض انزنو نے انجام دیا۔ کتاب غزلوں اور نظموں پر مشتمل ہے۔ نشست کی صدارت ڈاکٹر محمد شفیع ایازنے کی۔تقریب کی دوسری نشست میں ایک مشاعرہ کا انعقاد ہوا جس کی صدارت غلام محمد لالو نے کی۔ تقریب میں جنوبی کشمیر سے وابستہ کئی شعراء نے اپنا کلام پیش کیا جن میں قمر حمید اللہ، نادر احسن، بشیر، عبد الاحد واحد، ڈاکٹر شوکت شفا، منظور خالد، مشروع نصیب آبادی، یوسف جہانگیر، پروفیسر نثار ندیم، پرویز گلشن، راجہ مظفر، ساغر قیصر، مسعود ہاشم، حاجی رمضان، رشید صدیقی، منتظر یاسر، مظفر غزال، اظہار مبشر، مظفر دلبر، بشیر دلبر، میڑے منظور، نادم شوقیہ اور ڈاکٹر شیدا حسین شیدا شامل تھے۔
 

گلشن کلچرل فورم کشمیر کے اہتمام سے شاہ جیلانؒ کانفرنس 

 
سرینگر// گلشن کلچرل فورم کشمیراور لسہ خان فدا فاؤنڈیشن نے مشترکہ طور شاہ جیلان کانفرنس کا انعقاد کیا۔ کانفرنس کے دوران تعلیمات حضرت شیخ سید عبدالقادر جیلانیؒکی تعلیمات کے حوالے سے خطبات، نعت ومناقب اور درود ازکار بھی پیش کئے گئے۔ اس موقع پر معروف صوفی بزرگ، شاعر اور ترجمہ کار لسہ خان فدا کی تصنیف گلزار حقیت کی رسم رونمائی بھی عمل میں لائی گئی۔ تقریب میں پروفیسر گلشن مجید مہمان خصوصی کی حیثیت سے موجود تھے جبکہ فورم کے صدر سید بشیر کوثر نے نشست کی صدارت کی۔ فورم کے جنرل سیکریٹری گلشن بدرنی نے اپنے خطبۂ استقبالیہ میں تصوف کو اجاگر کرتے ہوئے تعلیمات فدا اپنانے پر زور دیا۔ خورشید خاموش، عبدالاحد شہباز، اور سید بشیر کوثر نے بالترتیب اپنے خطابات اور مقالات میں تعلیمات حضرت سید عبدالقادر جیلانی ؒ اور جناب لسہ خان فدا کو روحانی اور اخلاقی قدروں کی وہ مشعل قرار دیا جو بنی نوع انسان کیلئے ہر موڈ پر رہنما ثابت ہوجاتی ہے۔ مہمان خصوصی پروفیسر گلشن مجید نے اپنے صدارتی خطبہ میں لسہ خان فدا فاؤنڈیشن اور گلشن کلچرل فورم کشمیر کی ان کاوشوں کو کافی سراہا جن کے تحت اخلاقی اور ثقافت کی مثبت روایات کو عروج حاصل ہوجاتاہے۔
 

ناشری سے رام بن تک سخت ترین ٹریفک جام 

ایم ایم پرویز
 
رام بن //ہفتے کے روز ناشری سے رام بن تک جموں سرینگر قومی شاہراہ پر بھاری ٹریفک جام دیکھنے میں آیا ۔شاہراہ پر دونوں اطراف سے گاڑیوں کی آمدورفت کی اجازت دی گئی تھی۔شاہراہ کے اس حصے میں گاڑیاں، لوڈ کیریئر اور مسافر گاڑیاں لمبی قطار وں میں گھنٹوں ٹریفک جام میں پھنسی رہیں۔ناشری سے رام بن قصبے تک ٹریفک جام کی وجہ سے شاہراہ پر گاڑیوں کی آمدورفت رک گئی۔مسافروں کی شکایت ہے کہ حالیہ برفباری اور بارش کی وجہ سے سڑک صاف ہونے کے بعد آج صبح سرینگر سے جموں تک ٹریفک کی اجازت دی گئی تھی لیکن دوسری طرف سے بھی گاڑیاں چھوڑی گئیں۔انہوں نے بتایاکہ وہ گھنٹوں جام میں پھنسے رہے۔مسافروں نے الزام لگایا کہ محکمہ ٹریفک کے مطابق آج ٹریفک کو جموں کی طرف جانا تھا لیکن مخالف سمت سے گاڑیاں چھوڑی گئیں جس سے بدنظمی ہوئی اور ٹریفک جام لگا۔
 

کپوارہ میں کئی سڑکوں کی  خستہ حالی سے لوگ پریشان 

 
سرینگر// ضلع کپوارہ کے بیشتر دور درازعلاقوں میں رابطہ سڑکوں کی حالت انتہائی خستہ ہو چکی ہے جبکہ لنک روڑبھی انتہائی خستہ حالت میں ہیں جس کے نتیجے میں لوگوںکو طرح طرح کے مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔اکثر سڑکوں پر جگہ جگہ گہرے کھڈ بن چکے ہیں۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ اگرچہ سرکار نے قصبہ کی کئی سڑکوں کی مرمت کی تاہم متعدد علاقوں کو مکمل طور پر نظر اندا ز کیا گیا ۔ مقامی لوگوں نے آر اینڈ بی محکمہ سے اپیل کی کہ سڑکوں کی مرمت کے حوالے سے فوری طور اقدامات کریں ۔سی این آئی
 
 

وائرس اموات،بڈگام ضلع میں تعداد 100 

پرویز احمد 
 
 سرینگر //وسطی کشمیر کے بڈگام ضلع میں کورونا وائرس سے فوت ہونے والے افراد کی مجموعی تعداد 100ہوگئی ہے اور اسطرح کورونا وائرس سے ہونے والی اموات میں تیسرے نمبر پر آگیا ہے۔ کورونا وائرس سے ہونے والے اموات میں بارہمولہ 162 کے ساتھ دوسرے جبکہ سرینگر 416اموات کے ساتھ پہلے نمبر پر ہے۔ سرکاری اعداد وشمار میں بتایا گیا ہے کہ ضلع بڈگام میں 6852افراد کورونا وائرس سے متاثر ہوئے جن میں6468صحتیاب جبکہ 284ابھی مختلف اسپتالوں میں گھروں میں زیر علاج ہیں۔ جبکہ وائرس سے 100افراد کورونا وائرس سے فوت ہوگئے اور اسطرح بڈگام ضلع کورونا وائرس سے فوت ہونے والے افراد کی تعداد کے لحاظ سے تیسرے نمبر پر پہنچ گیا ہے۔ بارہمولہ میں 7406افراد وائرس سے متاثر ہوئے جن میں 6892صحتیاب جبکہ 162فوت ہوگئے۔ سرینگر شہر میں کورونا وائرس سے سب سے زیادہ 22ہزار892ہوگئی ہے جن میں 21268صحتیاب جبکہ 416کورونا وائرس سے فوت ہوگئے۔