پیپلز الائنس کے قیام سے بھاجپا کے آلہ کار بوکھلاہٹ کے شکار

کھنموہ میں نیشنل کانفرنس کی انتخابی مہم کے دوران ناصر اسلم وانی کا خطاب

تاریخ    28 نومبر 2020 (00 : 01 AM)   


سرینگر//جموں وکشمیر کے عوام بھاجپا اور کشمیر کے اندر موجود اُن کے آلہ کاروں سے بخوبی واقف ہیں اور ان کے مذموم ارادوں اور سازشوں کو خاک میں ملانے کیلئے ہمہ تن تیار ہیں۔ ان باتوں کا اظہار نیشنل کانفرنس کے صدرِ صوبہ کشمیر ناصر اسلم وانی نے کل حلقہ انتخاب سونہ وار میں چنائو مہم کے دوران کھنموہ میں خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر کی پہچان ، انفرادیت اور جتماعیت کے علاوہ لوگوں کے حقوق کی بحالی کیلئے جو مشترکہ سیاسی پلیٹ فارم قائم ہوا ہے اُس سے نہ صرف نئی دلی اور ناگپور والوں کی نیندیں حرام ہوگئیں ہیں بلکہ کشمیر کے اندر موجود آر ایس ایس اور بھاجپا کے آلہ کار بھی بوکھلاہٹ اور ہڈبڈاہٹ کے شکار ہوگئے ہیں۔یہی وجہ ہے کہ یہ لوگ آئے روز بوکھلاہٹ پر مبنی بیانات جاری کررہے ہیں اور عوامی اتحاد کے اُمیدواروں کو چنائوی مہم چلانے سے روک رہے ہیں۔ ناصر اسلم وانی نے کہا کہ گپکار الائنس کو جس طرح سے جموں کشمیر اور لداخ میں عوام کو بھر پور تعاون اور اشتراک ملا ہے وہ ایک خوش آئندہ اور حوصلے بلند کرنے والی بات ہے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ انتخابات میں عوام کے پاس عوامی اتحاد برائے گپکار اعلامیہ کو مزید مضبوط کرنے کا موقع ہے۔ لوگ اپنا قیمتی ووٹ دیکر پوری دنیا اور ملک میں اپنی آواز بلند کرسکتے ہیں۔ احسان پردیسی نے اپنے خطاب میں کہا ہے کہ تمام قسم کی سہولیات کے باوجود بھی بھاجپا اور اس کی بی ٹیم ان دو بلاکوں میں لوگوں کا تعاون حاصل کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈی ڈی سی انتخابات کیلئے عوامی اتحاد کی طرف سے کھنموعہ اور ہارون میں جو اُمیدوار میدان میں اُتارے گئے ہیں انہیں سماجی خدمات اور جمہوریت کی مضبوطی کیلئے جانا جاتا ہے جس کی وجہ سے انہیں زمینی سطح پر لوگوں کا بھر پور تعاون اور اشتراک مل رہا ہے ۔ اس موقعے پر صدرِ ضلع سرینگر پیر آفاق احمد، ڈاکٹر سعید اور دیگر عہدیداران بھی موجود تھے۔ 

تازہ ترین