تازہ ترین

۔ 36 سرپنچ اور 768 پنچ بلامقابلہ منتخب: الیکشن کمشنر

تاریخ    28 نومبر 2020 (00 : 01 AM)   


سید امجد شاہ
جموں// ریاستی الیکشن کمشنرجموں و کشمیر کے کے شرما نے کہا کہ جموں و کشمیر میں 36 سرپنچ اور 768 پنچ بلامقابلہ منتخب ہوئے ہیں جبکہ ضلع ترقیاتی کونسل کے انتخابات میں کوئی بھی امیدوار بلا مقابلہ فتح حاصل نہیں کرپایا۔انہوں نے مزید کہا کہ 368 پنچ حلقوں پر سنیچر یعنی آج ضمنی انتخابات ہوں گے جن کیلئے کل 852 امیدوار میدان میں ہیں جن میں 635 مرد اور 217 خواتین شامل ہیں۔انہوںنے بتایاکہ ووٹنگ صبح 7 بجے شروع ہوگی اور یہ سہ پہر 2 بجے تک ختم ہوگی۔انہوں نے بتایا’’43 ڈی ڈی سی حلقوں میں انتخابات ہوں گے جس میں 296 امیدوار میدان میں ہیں جن میں 207 مرد اور 89 خواتین شامل ہیں‘‘۔پہلے مرحلے میں (28 نومبر) سرپنچ کی ضمنی انتخابات ہونے کے بارے میں انہوں نے کہا’’27 سرپنچ حلقوں کے لئے انتخاب لڑنے والے 279 امیدواروں میں 203 مرد اور 76خواتین ہیں‘‘۔انہوں نے کہا کہ کل 368 پنچ انتخابی حلقے ہیں جن میں ووٹنگ ہونے جارہی ہے جس میں 852 امیدوار میدان میں ہیں جن میں 635 مرد اور 217 خواتین شامل ہیں۔انہوں نے کہا کہ 57 لاکھ ووٹر 8 مرحلوں میں پنچایت انتخابات میں حصہ لیں گے جبکہ انتخابات کے پہلے مرحلے میں 7 لاکھ ووٹروں کو حصہ لیناہے ۔انہوں نے مزیدبتایاکہ انتخابات کے لئے 2001 کے قریب پولنگ اسٹیشن قائم کردیئے گئے ہیں۔شرما کے مطابق ’’تمام 20 اضلاع بشمول ہم نے جموں کے ڈوڈہ، کشتواڑ اور وادی کشمیر کے کپوارہ اور بانڈی پورہ کے دور دراز علاقوں میں بھی انتظامات کر رکھے ہیں جہاں انتخابی سامان، سیکورٹی اور پولنگ عملے کو پولنگ اسٹیشنوں میں منتقل کرنا ہمارے سامنے چیلنج تھا‘‘۔شرما نے کہاکہ کئی علاقوں میں عملے کو روانہ کرنے کیلئے ہیلی کاپٹروں کا استعمال کیاگیا۔ان کاکہناتھا’’ہمارے پاس پولیس کی کمی نہیں ہے، اگرچہ ہمیں کشتواڑ اور گریز (بانڈی پورہ) میں کچھ پریشانیوں کا سامنا ہے تاہم موسم میں بہتری کے ساتھ پولیس فورس کی مطلوبہ تعداد متعلقہ پولنگ اسٹیشنوں کو بھجوا دی گئی ہے اور منصفانہ انتخابات کے لئے تمام انتظامات کردیئے گئے ہیں،پولنگ آفیسراور پریذائڈنگ افسران بھی اپنے پولنگ اسٹیشنوں پر پہنچ چکے ہیں‘‘۔

تازہ ترین