تازہ ترین

میدویدیو نے اے ٹی پی فائنلز میں جیتا سال کا آخری خطاب

تاریخ    24 نومبر 2020 (00 : 01 AM)   


یو این آئی
لندن / دنیا کے چوتھے نمبرکے کھلاڑی روس کے ڈینل میدویدیو نے تیسری پوزیشن کے کھلاڑی اور یو ایس اوپن چیمپیئن آسٹریا کے ڈومینک تھئم کوسخت مقابلہ میں اتوار کو 6-4، 6-7 (2)، 4-6 سے شکست دے کر سال کے آخری ٹینس ٹورنامنٹ اے ٹی پی ورلڈ ٹور فائنلس کاخطاب اپنے نام کرلیا۔میدویدو نے دو گھنٹے اور 43 منٹ تک جاری رہنے والے اس ٹائٹل مقابلے میں تھئیم کو شکست دے کریہ خطاب جیتا۔ اے ٹی پی فائنلز کی تاریخ کا سب سے طویل فائنل تھا۔ میدویدیو اس کے ساتھ ہی سیزن کے آخری ٹورنامنٹ میں دنیا کے ٹاپ تین کھلاڑیوں کو شکست دینے والے پہلے کھلاڑی بھی بن گئے ۔ یہ ان کے کیریئر کا سب سے بڑاخطاب ہے ۔روسی کھلاڑی نے گروپ میں پانچ مرتبہ کے چیمپیئن اورعالمی نمبرایک کھلاڑی سربیا کے نواک جوکووچ کو3-6، 3-6 سے ، سیمی فائنل میں دنیا کے نمبردوکھلاڑی اسپین کے رافیل نڈال کو 6-3، 6-7(4)3-6سے اور فائنل میں دنیا کے نمبرتین کھلاڑی تھیئم کو6-4، 6-7(2)، 4-6 سے شکست دے کر تاریخ رقم کی۔ 1990 میں اے ٹی پی ٹور شروع ہونے کے بعد سے ایک ٹورنامنٹ میں یہ کارنامہ انجام دینے والے میدویدیوچوتھے کھلاڑی بن گئے ہیں۔ میدویدیو 2009 میں نیکولائی دیویدینکو کے بعد یہ اعزاز جیتنے والے پہلے روسی کھلاڑی بن گئے ہیں۔24 سالہ میدویدیو ٹائٹل کے خطابی مقابلے میں 27 سالہ تھیئم پر جیت نے لگاتار چھٹے سال ٹورنامنٹ کو نیا فاتح دیا۔ میدویدیو نے تھیئم کے خلاف اب اپنے کیریئر کا ریکارڈ 2-3 کرلیا ہے ۔ میدویدیو نے اس سے قبل تھیئم کو پچھلے سال مانٹریل میں شکست دی تھی۔ دونوں کے درمیان اس سال کے یوایس اوپن میں بھی مقابلہ ہوا تھا جس میں تھیئم نے کامیابی حاصل کی تھی۔ لیکن میدویدیو نے اس خطابی مقابلے کو جیت کر گزشتہ شکست کا بدلہ لے لیا۔یواین آئی۔