کولگام کے دونوجوانوں کی گمشدگی | بھاجپا اترپردیش حکومت کیساتھ معاملہ اُٹھائیگی:شاہنوازحسین

تاریخ    23 نومبر 2020 (00 : 12 AM)   


شبیرابن یوسف
سرینگر//بھارتیہ جنتاپارٹی نے کہا ہے کہ وہ کولگام کے دو گمشدہ ڈرائیوروں کا معاملہ اتر پردیش حکومت کے ساتھ اُٹھائی گی اورجموں کشمیرکے لوگوں کے ساتھ کسی قسم کی زیادتی کی اجازت نہیں دے گی جو جموں کشمیر سے باہر تعلیم یاتجارت کی غرض سے گئے ہیں۔بھاجپا کے قومی ترجمان شاہنوازحسین نے یہاں نامہ نگاروں کو بتایا ،’’ہم اترپردیش کی حکومت سے کولگام کے دوگمشدہ ڈرائیوروں کے بارے میں بات کریں گے۔بھاجپا جموں کشمیرکے نوجوانوں،جو تعلیم یا تجارت کی غرض سے باہر گئے ہیں، کے ساتھ کسی قسم کے غلط برتائو کو ہونے نہیں دے گیَ‘‘انہوں نے کہا،’’ان کی سلامتی ہماری ذمہ داری ہے اورہم اس کی مکمل ضمانت دیتے ہیں ۔جب ہریانہ میں ایک سے دوواقعات کا ہمیں پتہ چلا ہم نے فوری طور کارروائی کی‘‘۔ کولگام ضلع کے محمد پورہ کے دوبھائی گزشتہ تین دن سے اتر پردیش میں لاپتہ ہوگئے ہیں ۔خاندانی ذرائع کے مطابق یونس احمدڈار عمر26سال اورفیصل حسن ڈارعمر18برس نے اپنی ٹرک زیرنمبرJK03D-7806کو14نومبر کولوڈ کیااورکانپور کیلئے روانہ ہوئے ۔انہوں نے کہا کہ وہ18نومبر تک گھروالوں کے ساتھ رابطہ میں تھے ۔انہوں نے کہا کہ وہ18نومبر سے ان سے رابطہ کرنے کی کوشش کرتے ہیں لیکن ان سے رابطہ نہیں ہو پارہا ہے اوران کافون بندآرہا ہے ۔سیاسی ورکروں اور کارکنوں کو جنہیں5اگست2019کے بعد جموں کشمیر سے باہر کی جیلوں میں بند کیا گیا ،کورہا کرنے سے متعلق پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ان کی ٹھیک طرح سے دیکھ بھال ہورہی ہے ،انہیں بہتر کھانا فراہم کیاجاتا ہے اوران کے ساتھ بہتر سلوک کیاجاتا ہے ۔انہوں نے مزید کہاکہ میں اس سوال کا جواب نہیں دے سکتاکیوں کہ یہ حفاظتی اداروں کی ذمہ داری ہے ۔بھاجپا کے سینئر رہنما نے کہا کہ بہت زیادہ لوگ احتیاطی نظربند نہیں ہیں ،وہ مختلف معاملات جن میں حوالہ بھی شامل ہے میں ملوث ہیں۔انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں قانون اپناکام کرے گا۔ہر ایک کو اس کے خطائوں کیلئے جوابدہ ہونا ہے ۔نرم خوعلیحدگی پسندوں کو جگہ فراہم کرنے کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں شاہنوازحسین نے کہا کہ کوئی نرم خو علیحدگی پسندنہیں ہوسکتا۔یاتوآپ علیحدگی پسند ہیں یانرم خو ۔انہوں نے کہا کہ جوبھی بھارتی آئین اور پرچم کاوفادار ہے وہ ہمارا دوست ہے ۔انہوں نے کہا کہ جو بھارتی پرچم کااحترام نہیں کرتا وہ نرم خو نہیں ہے ۔اس میں ایک پتلی لکیر ہے۔۔۔آپ کو بھاجپا کے ساتھ اتفاق نہیں کرنا ہے لیکن آپ کو قومی پرچم اور آئین کاساتھ دینا ہے ۔آپ جس ملک میں رہتے ہیں اُسے پیار کرنا ہے۔ان الزامات کہ دوسری جماعتوں کے امیدواروں جو ضلع ترقیاتی کونسل انتخاب میں شرکت کررہے ہیں ،کو مہم چلانے کی اجازت نہیں دی جاتی ہے ،انہوں نے کہا کہ اس بارے میں کوئی امتیاز نہیں برتا جاتا ہے اور یہ قدم صرف حفاظتی مقصد کیلئے کیا گیا ہے ،ہمارے امیدواروں کو بھی اسی صورتحال کاسامناہے۔کسی کے ساتھ کوئی امتیازبرتا نہیں جاتا۔
 

تازہ ترین