جنوبی کشمیر کے متعدد علاقے پینے کے صاف پانی سے محروم | خان محلہ قاضی گنڈ کے لوگ دو رِ جدید میں بھی آلودہ پانی پینے پر مجبور

تاریخ    23 نومبر 2020 (00 : 12 AM)   


عارف بلوچ
اننت ناگ// جنوبی کشمیر میں کئی گائوں پینے کے صاف پانی سے محروم ہیں جس کی وجہ سے مقامی آبادی آلودہ پانی پینے پر مجبور ہے ۔خان محلہ چک بڈونی قاضی گنڈ قصبہ سے محض1کلو میٹر دور آباد ہے ۔ریلوے اسٹیشن قاضی گنڈ کے متصل آباد بستی میں جل شکتی محکمہ کی جانب سے کوئی  واٹر سپلائی اسکیم نہیں پہنچی ہے جس کی وجہ سے آبادی آلودہ پانی پینے پرمجبورہے۔ بستی کی خواتین روزانہ مٹکے لیکر نزدیکی ندی نالوںسے پانی حاصل کرتی ہیں جو کافی آلودہ اور مضر صحت ہے۔رافعی نامی ایک خاتون نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ مضر صحت پانی استعمال کرنے سے وہ مختلف بیماریوں میں مبتلا ہوچکے ہیں ۔لوگوں کا کہنا ہے کہ بستی کے سامنے ریلوے اسٹیشن قائم ہیں تاہم بنیادی سہولیات میسر نہ ہونے کی وجہ سے انہیں سخت مشکلات درپیش ہیں۔انہوں نے کہا کہ کئی سال قبل جل شکتی محکمہ نے گائوں کیلئے واٹر سپلائی اسکیم شروع کی ہے جس کیلئے پائپیں بھی بچھائی ہیں تاہم بعد میں نامعلوم وجوہات کے باعث کام بند کیا گیا ۔انہوں نے جل شکتی محکمہ سے اپیل کی کہ گائوںکو صاف پانی فراہم کیا جائے ۔ایگزیکٹیو انجینئر جل شکتی قاضی گنڈ کا کہنا ہے کہ خان محلہ کو نئی اسکیم کے تحت پانی کی سپلائی فراہم کیا جائے گا اور منظوری ملتے ہی کام شروع کیا جائے گا۔
 

تازہ ترین