تازہ ترین

۔2022 میں پارلیمنٹ کا سرمائی اجلاس نئی عمارت میں ہوگا

تاریخ    22 نومبر 2020 (00 : 01 AM)   


 نئی دہلی// پارلیمنٹ کی نئی عمارت کا سنگ بنیاد اگلے ماہ ہونے اور آزادی کی 75 ویں سال گرہ کے بعد 2022 کا سرمائی اجلاس کا انعقاد نئی عمارت میں ہونے کا امکان ہے ۔لوک سبھا صدر اوم برلا نے آج یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ پارلیمنٹ کی نئی عمارت کے لئے کام شروع ہوچکا ہے ۔تعمیراتی کام میں اس بات کا پورا دھیان رکھا جائے گا کہ فضا اور صوتی آلودگی نہ ہو اور نہ ہی حالیہ عمارت میں پارلیمنٹ کی کارروائی یا انتظامیہ کام کاج میں رخنہ پڑے ۔انہوں نے کہا کہ اکتوبر 2022 تک یہ نیا پارلیمنٹ ہاؤس بن کر تیار ہوجائے گا اور آزادی کی 75ویں سالگرہ کے موقع پر پارلیمنٹ کا اجلاس نئی عمارت سے چلایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ جلد ہی سنگ بنیاد کا پروگرام منعقد کیا جائے گا۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے واضح کیا کہ سنگ بنیاد دسمبر میں ہی ہوجائے گا۔مسٹر برلا نے کہا کہ موجودہ پارلیمنٹ تقریبات کے انعقاد کے لئے زیادہ موثر مقام کا انتظام کرنے کے لئے مناسب سہولیات سے لیس کیا جائے گا تاکہ نئی عمارت کے ساتھ ہی اس عمارت کا استعمال بھی یقینی ہوسکے ۔لوک سبھا سکریٹیریٹ کے افسروں کے مطابق نئی عمارت میں پارلیمنٹ اراکین کے لئے الگ دفتر ہوں گے ۔ نئی عمارت میں ارکان پارلیمنٹ کے لئے ایک لاؤنج،لائبریری ،چھ کمیٹی روم اور ڈائننگ ہال بھی ہون گے ۔اراکین کے لئے مہیا کرائی جانے والی دیگر سہولیات میں کمروں میں ہر رکن پارلیمنت کی سیٹ سے زیادہ آرام دہ ہوگی اور اس میں ڈیجیٹل سہولیات مہیا ہوں گی جو پیپر لیس دفتر کی سمت میں ایک اہم قدم ہوگا۔لوک سبھا اور راجیہ سبھا کمروں کے علاوہ نئی عمارت میں ایک شاندار آئینی کمرہ ہوگا جس میں ہندوستان کی جمہوریت کی وراثت کی نمائش کے لئے دیگر اشیا کے ساتھ ساتھ آئین کی اصل کاپی،ڈیجیتل ڈسپلے وغیرہ ہوں گے ۔اس میٹنگ کے دوران یہ اطلاع دی گئی کہ مہمانوں کو اس ہال میں جانے کی سہولت مہیا کرائی جائے گی تاکہ وہ پارلیمانی جمہوریت کے طورپر ہندوستان کے سفر کے سلسلے میں جان سکیں ۔نئی عمارت کی تعمیراتی کام کی نگرانی کے لئے ایک نگرانی کمیٹی تشکیل دی جائے گی۔اس نگرانی کمیٹی میں دیگر افراد کے ساتھ ساتھ لوک سبھا سکریٹیریٹ ،مکانات اور شہری امور کی وزارت،مرکزی تعمیرات عامہ کے محکمے ،نئی دہلی میونسیپل کارپوریشن کونسل کے افسر اور پروجیکٹ کے آرکیٹیکٹ/ڈہزایمر بجہ شامل ہوں گے ۔یواین آئی