شاہراہ پر ٹریفک بند رہا،مسافر پیدل محوسفر،کئی علاقوں میں اشیائے ضروریہ کی سپلائی متاثر

تاریخ    14 نومبر 2020 (00 : 01 AM)   


ایم ایم پرویز
رام بن//جموں سرینگر شاہراہ جمعہ کے روز ٹریفک کی نقل و حرکت کیلئے بند رکھی گئی جس کی وجہ سے سینکڑوں مسافروں کو پیدل محوسفر کرتے دیکھاگیا جنہوں نے میلوں کا سفر پیادہ کیا ۔شاہراہ کی مرمت کی وجہ سے اسے گاڑیوں کی آمدورفت کیلئے بند رکھاگیاتھا۔ایک پولیس عہدیدار نے بتایا کہ نگروٹہ دھار روڈ اور جکھینی ادھم پور اور دیگر متعدد مقامات پر کشمیر کے لئے ضروری سامان لے جانے والے سامان بردار جہازوں کو روک لیا گیا۔انہوں نے بتایا کہ ہفتہ کی صبح تک گاڑیوں کی آمدورفت معطل رہے گی۔سرینگر جموں قومی شاہراہ پر ہفتہ وار گاڑیوں کی آمدورفت کی معطلی نے کشمیر اور دیگر علاقوں کے لئے ضروری سامان کی نقل و حمل کو بری طرح متاثر کیا ۔سرینگر جموں شاہراہ پر گاڑیوں کی آمدورفت معطل ہونے کی وجہ سے وادی کشمیر اور ضلع رام بن کے کچھ علاقوں میں جمعرات کی رات سے آمدورفت مکمل طور پر بند ہوگئی۔ جن علاقوں سے شاہراہ گزرتی ہے وہاں اشیائے ضروریہ کی فراہمی بری طرح متاثر ہوئی ہے۔چندرکوٹ،رام بن،رامسو اور بانہال میں تازہ سبزیوں اور پھلوں کی مارکیٹ بند رہیں۔ کئی علاقوں میں دودھ کی فراہمی بھی جزوی طور پر متاثر ہوئی۔مسافروں کی ایک بڑی تعداد کواپنی منزل تک پہنچنے کیلئے شاہراہ پر چلتے ہوئے دیکھا گیااور انہیں پیدل چلنے سے تکلیف ہوئی ۔دریں اثناء محکمہ موسمیات کی طرف سے برفباری کی پیشگوئی کے پیش نظرشاہراہ کے بند ہونے کے امکانات ہیں اس لئے مسافروں کو سفرسے گریز کرنے کا مشورہ دیاگیاہے۔تاہم مناسب موسم اور سڑک کی بہتر حالت ہونے کی صورت میں مسافربرداراوردیگر گاڑیوں کو نگروٹہ جموں سے صبح 5 بجے سے 11 بجے تک اور جکھینی ادھم پور سے صبح 6 بجے سے شام 12 بجے تک سفر کی اجازت ہوگی۔
 

تازہ ترین