تازہ ترین

صفاپورہ اور اس سے ملحقہ علاقوں میں پینے کے پانی کی قلت

تاریخ    9 نومبر 2020 (00 : 12 AM)   


ارشاد احمد
گاندربل//صفاپورہ گاندربل میں ہزاروں نفوس پر مشتمل آبادی کو پچھلے ایک ہفتہ سے پانی کی قلت سے گوناگوں مسائل کا سامنا ہے۔صفاپورہ اور اس سے ملحقہ علاقوں کو مانسبل جھیل کے کنارے واقع کولہ پورہ فلٹریشن پلانٹ سے پینے کا پانی فراہم کیا جاتا ہے لیکن کولہ پورہ،مین مارکیٹ،بٹہ پورہ،رنگر محلہ،شیخ محلہ،وانی محلہ،درزی محلہ،برکتی محلہ،چک محلہ اورمیر آبادی سمیت دیگر کئی محلوں میں ایک ہفتہ سے پینے کے پانی کی سخت قلت پائی جارہی ہے جس کے نتیجے میں لوگوں میں جل شکتی محکمہ کے تئیں سخت ناراضگی پائی جارہی ہے۔ سجاد احمدنامی ایک مقامی باشندہ نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ پچھلے ایک ہفتہ سے علاقے میںپینے کے پانی کی سخت قلت ہے اور اب لوگ جامع مسجد کے صحن میں موجود چشمہ سے ہی پانی حاصل کرتے ہیں۔جل شکتی محکمہ کے آفیسر منظور میرانی نے اس سلسلے میںکہا کہ’محکمہ میں تعینات عارضی ملازمین کی ہڑتال کے سبب انہیں کئی مشکلات درپیش ہیںتاہم پانی کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے گا‘‘۔واضح رہے کہ سوناواری کے متعدد علاقوں میں آئے روز پینے کے پانی کی عدم دستیابی کی شکایات مل رہی ہیں اور متعلقہ حکام سے اقدامات کا مطالبہ کیا جارہا ہے۔
 

تازہ ترین