تازہ ترین

۔2005سے قبل تک کچھ لوگ صرف اپنے خاندان کی ترقی میں مصروف تھے :نتیش

تاریخ    1 نومبر 2020 (00 : 01 AM)   


 بھاگل پور//بہارکے وزیراعلیٰ نتیش کمار نے انصاف کے ساتھ ریاست کے ہرایک علاقے کی ترقی کرنے کی کامیابی شمارکراتے ہوئے سابق وزیراعلیٰ لالو پرساد یادو اور رابڑی دیوی کا نام لیے بغیر ان پر نشانہ لگایا اور کہا کہ سال 2005 سے قبل تک تو کچھ لوگ محض اپنے خاندان کی ترقی میں ہی مصروف تھے ۔جنتا دل یونائیٹڈ(جے ڈی یو)کے قومی صدر مسٹر کمار نے ہفتہ کو ضلع کے ناتھ نگر اور گوپال پور اسمبلی حلقوں میں قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے )امیدوار کے حق میں منعقد انتخابی اجلاس کو خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سال 2005 میں ان کی حکومت بننے کے بعد سے انہوں نے ریاست میں بڑھتے جرائم پر روک لگائی اور قانون کی حکمرانی قائم کی۔اس کے بعد ہر علاقے میں ترقیاتی کاموں کو تیزی سے کرایا گیا، جس سے سماج کی آخری قطار میں کھڑے لوگوں تک بنیادی سہولیات پہنچائی گئیں۔مسٹر کمار نے کہا کہ ان کی حکومت کا بنیادی اصول انصاف کے ساتھ ترقی رہا ہے ۔ان کی حکومت نے اس اصول پر کام کرتے ہوئے گزشتہ 15 سالوں میں ریاست کے ہرعلاقے اور ہر طبقے کی انصاف کے ساتھ ترقی کی ہے ۔لیکن سال 2005 سے قبل تک کچھ لوگ صرف اپنے خاندان کی ہی ترقی میں مصروف تھے ۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ ریاست میں خاتون کو بااختیار بنانے کے لیے ان کی حکومت نے پنچایتی راج اداروں و بلدیاتی انتخابات میں خواتین کو پچاس فیصد ریزرویشن دیا۔اسی طرح سرکاری ملازمت میں خواتین کے لیے 35 فیصد ریزرویشن کا انتظام کیا گیا۔وہیں دیہی علاقوں کی خواتین کو خودکفیل بنانے کے لیے عالمی بینک سے قرض لے کر جیویکاگروپوں کی تشکیل کرائی گئی ہے ، جس سے ایک کروڑ بیس لاکھ خواتین آج جڑی ہوئی ہیں۔مسٹر کمار نے کہا کہ بہار کے ہر اضلاع میں تعلیمی اداروں کا قیام کراتے ہوئے ابتدائی سے اعلیٰ تعلیم تک کابہت اچھا انتظام کیا گیا اور آج طلبہ وطالبات ڈگریاں حاصل کررہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ان کو ریاست میں ہی تکنیکی اور روزگار سے متعلق تربیت بھی دی جارہی ہے ۔وہیں غریب بچوں کو اعلیٰ تعلیم کے لیے اسٹودنٹ کریڈٹ کارڈ کے ذریعہ قرض سمیت دیگر سہولیات مہیا کرائی جارہی ہیں۔وزیراعلیٰ نے کہا، سماج کے ہرطبقے کی ترقی کا کام کیا گیا ہے ۔ہم نے پندرہ سالوں تک ریاست کے لوگوں کی ایمانداری سے خدمت کی ہے ۔عوام کی خدمت ہی میرامذہب ہے اور اس کے لیے میں پوری ریاست کے لوگوں کو اپنا خاندان مانتا ہوں۔نئی جنریشن کے بچوں کو معلومات دینا ضروری ہے کہ پہلے بہار کی حالت کیسی تھی، عام زندگی کیسی تھی۔اس کے بعد ہماری حکومت بننے پر ریاست کی ترقی کے لیے ہم نے کیا کیا کیا ہے ۔یواین آئی