تازہ ترین

۔3بھاجپا کارکن ہلاک

یورخوشی پورہ قاضی گنڈ میں فائرنگ

تاریخ    30 اکتوبر 2020 (00 : 01 AM)   


عارف بلوچ
 قاضی گنڈ//یور خوشی پورہ قاضی گنڈ میں مشتبہ جنگجوئوں نے بی جے پی یووا مورچہ کے ضلع جنرل سیکریٹری کولگام سمیت 3کارکنوں کو گولیاں مار کر ہلاک کردیا۔مقامی لوگوں کے مطابق یور خوشی پورہ عید گاہ کے نزدیک شام دیر گئے 8بجکر 20منٹ پر ضلع سیکریٹری کولگام یووا مورچہ فدا حسین ایتوعرف ٹیپو ولد گل محمد ساکن وے کے پورہ، بھاجپا کارکن اور الیکٹرک انجینئر گریجویٹ عمر رشید بیگ ولد عبدالرشید ساکن سوپٹ اور عمر رمضان حجام ولد محمد رمضان ساکن وے کے پورہ اپنی ذاتی گاڑی زیر نمبر JK02BU/79 میں کہیں جارہے تھے، تو عید گاہ کے نزدیک جنگجوئوں نے انکی گاڑی پر حملہ کیا اور اندھا دھند فائرنگ کی جس کے نتیجے میں گاڑی میں سوار تینوں شدید طور پر زخمی ہوئے لیکن اسپتال لیجاتے ہوئے فدا حسین راستے میں ہی دم توڑ بیٹھا۔بعد میں دیگر دو ورکر بھی دم توڑ بیٹھے۔ میڈیکل سپر انٹنڈنٹ قاضی گنڈ ڈاکٹر آسمہ نے  کہا کہ اسپتال میں تین شہریوں کو لایا گیا جو مردہ ہوچکے تھے۔ بتایا جاتا ہے کہ جنگجو بھی ایک گاڑی میں سفر کررہے تھے اور انہوں نے بھاجپا ورکروں کی گاڑی روک کر اس پر نزدیک سے گولیاں چلائیں۔عمر رشید بیگ کے اہل خانہ نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ عمر الیکٹراک انجینئر نگ گریجویٹ تھا اور ماں باپ کا اکلوتابیٹا تھا۔انہو ں نے کہا کہ انہٰن عمر کے بھاجپا کیساتھ وابستگی کے بارے میں کوئی علمیت نہیں ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ شام 7بجے اسے فون آیا جس کے بعد اس نے گھر میں کہا کہ ایک دوست کی کال تھی، میں ابھی واپس آوں گا، تب سے اسکا فون بھی کوئی نہیں اٹھا رہا ہے۔بی جے پی کے ترجمان منظور بٹ نے ایک آڈیو بیان میں کہا کہ تینوں بی جے پی کیساتھ وابستہ تھے اور ضلع یووا مورچہ کے عہدیدار تھے۔انہوں نے کہا کہ بھاجپا انکی ہلاکت کی مذمت کرتا ہے۔
پولیس بیان
پولیس نے ایک بیان میں کہا ہے کہ شام 8بجکر 20منٹ پر ملی ٹینٹوں نے وے کے پورہ  میں بی جے پی کے تین ورکروں پر گولیاں چلائیں ۔ اسکے فوراً بعد پولیس افسران یہاں پہنچ گئے اور زخمیوں کو اسپتال پہنچایا۔ابتدائی تحقیقات سے پتہ چلا کہ جنگجوئوں نے فدا حسین ایتو ولد غلام احمد(ضلع ڈسٹرکٹ یوتھ جنرل سیکریٹری) کے علاوہ دیگر دو بی جے پی ورکروں عمر رشید بیگ اور عمر رمضان حجام  پر گولیاں چلائیں جس  کے نتیجے میں وہ شدید زخمی ہوئے اور  اسپتال میں دم توڑ بیٹھے۔پولیس نے اس معاملے پر کیس زیر نمبر294/2020درج کر کے تحقیقات شروع کردی ہے۔ فورسز نے جنگجوئوں کی تلاش کیلئے کئی مقامات پر چھاپے مارے۔
 

گورنر کی مذمت

نیوز ڈیسک
 
سرینگر// لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے قاضی گنڈ میں سیاسی ورکروں کی ہلاکت کی مذمت کی ہے ۔ ایک بیان میں لیفٹیننٹ گورنر نے ہلاکتوں پر شدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حملہ آور انسانیت کے دشمن ہیں اور ایسے بزدلانہ کارروائی کی کوئی جوازیت نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ قانون اپنا کام کرے گا اور جو اس بزدلانہ کارروائی میں ملوث ہیں انہیں انجام تک پہنچایا جائے گا۔