تازہ ترین

مارچ سے اگست تک قرضداروں کو بڑی راحت

۔2کروڑ روپے تک کے قرضوں کے سودپرلگاسود معاف

تاریخ    25 اکتوبر 2020 (00 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک
نئی دہلی//قرضداروں کو حکومت نے دیوالی کے موقعہ ایک بڑی راحت دیتے ہوئے امسال مارچ سے اگست تک دوکروڑ روپے تک کے قرضے کے سود کومعاف کرنے کااعلان کیا ہے ،چاہے انہوں نے قرض کی ادائیگی میں دی گئی مہلت کافائدہ اُٹھایا ہویانہ ہو۔محکمہ خزانہ نے عدالت عظمیٰ کی ہدایات کے پس منظر میں سود معاف کرنے سے متعلق رہنماخطوط کوجاری کیا جن کی رو سے خزانہ عامرہ پر6500کروڑ روپے کابوجھ پڑے گا۔عدالت نے 14 اکتوبر کوہدایت دی تھی کہ حکومت کو دو کروڑ روپے تک کے قرضے پر ریزرو بینک آف انڈیا کے قرضوں کی ادائیگی سے متعلق مہلت کے تحت کوروناوائرس کی عالمگیر وباء کے پیش نظر سود کو معاف کرنا چاہیے ۔عدالت نے کہا کہ عام آدمی کی دیوالی حکومت کے ہاتھ میں ہے ۔رہنماخطوط کے مطابق اسکیم کے تحت قرضدار یکم مارچ سے31اگست 2020تک مخصوص قرضہ کھاتوں پراس سہولت سے استفادہ حاصل کرسکتے ہیں۔ اس کے مطابق قرضہ دارجن کی29فروری2020کو منظوری کی حد اور بقایادوکروڑ روپے سے زیادہ نہ ہو،اس اسکیم کے اہل ہیں ۔قواعد کے مطابق 29فروری کو قرضہ کا کھاتہ معیاری ہونا چاہیے اور یہ ناقص کارکردگی والااثاثہ نہیں ہونا چاہیے ۔اسکیم کے دائرے میں تعلیمی قرضہ،کریڈٹ کارڈ بقایاجات،آٹولون،ایم ایس ایم ای قرضے،کنریومر لون،اورکنزمشن لون آتے ہیں ۔اسکیم ان کھاتہ داروں پر بھی لاگوہوگی جنہوں نے قرضوں کی ادائیگی میں دی گئی مہلت کا استعمال نہیں کیا ہوگااور وہ برابر قرضہ واپس ادا کررہے ہو۔
 

تازہ ترین