تازہ ترین

لال منڈی میں محکمہ دیہی ترقی کے ملازمین کا احتجاج

عارضی ملازمین کی مستقلی کا مطالبہ

تاریخ    20 اکتوبر 2020 (00 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک
سرینگر// محکمہ دیہی ترقی میں کام کرہے عارضی ملازمین نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ اگر انکی مستقلی کیلئے فوری طور پر اقدامات نہیں کئے گئے تو وہ احتجاجی لہر میں شدت لائے گے۔ محکمہ کے ملازمین نے رورل ڈیولپمنٹ ڈیلی ویجرس ایسو سی ایشن کے جھنڈے تلے لال منڈی سرینگر میں احتجاج کرتے ہوئے نعرہ بازی کی۔مظاہرین نے ہاتھوں میں بینئر اور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے،جن پر انکے مطالبات کے حق میں تحریر درج تھی۔نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے ایسو سی ایشن کے صدر امتیاز احمد نے کہا کہ وہ گزشتہ25برس سے لیکر28برسوں تک اس محکمہ میں کام کر رہے ہیں تاہم ابھی تک بیشتر عارضی ملازمین کو مستقل نہیں کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ مسلسل حکومتوں نے انہیں فراموش کیا تھا اور جب از خود انہوں نے یہ معاملہ سابق گورنر این این وہرا کی نوٹس میں لایا تو انہوں نے متعلقہ محکمہ سے اعداد وشمار اور تفصیلات طلب کی۔ امتیاز احمد نے بتایا کہ مجموعی طور پر  وہ912 عارضی ملازمین تھے،جن میں60ملازمین فوت ہوچکے ہیں اور صرف150کے قریب ملازمین کو مستقل کیا گیا۔ ایسو سی ایشن کے صدر نے کہا کہ وہ تمام ملازمین ایس آر ائو64کے دائرے میں آتے ہیں،کیونکہ بیشتر ملازمین1994 سے کام کر رہے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ انکے دستاویزات دفاتروں میں دھول کھا رہے ہیں اور انتظامیہ و حکومت انہیں مستقل کرنے کیلئے کوئی بھی سبیل نہیں کر رہی ہے،جس کے نتیجے میں وہ ذہنی اور نفسیاتی بیماریوں میں مبتلا ہوچکے ہے۔احتجاجی ملازمین نے کہا کہ ان کے بچوں کا مستقبل تاریک بن چکا ہے کیونکہ وہ اب سبکدوشی کی عمر تک پہنچ چکے ہیں۔انہوں نے سرکار کو متنبہ کیا کہ اگر فوری طور پر انہیں مستقل نہیں کیا گیا تو وہ اپنی احتجاجی لہر کو تیز کریں گے۔
 

تازہ ترین