تازہ ترین

لارنو کوکر ناگ میں تصادم،پلوامہ کاجنگجو جاں بحق

ایک فرار، زعفران کالونی پانپور میں جنگجوئوں کا اعانت کار گرفتار

تاریخ    18 اکتوبر 2020 (00 : 01 AM)   


عارف بلوچ
 اننت ناگ //جنوبی کشمیر میں ضلع اننت ناگ کے لار نو جنگلاتی علاقے میں مسلح جھڑپ کے دوران پلوامہ کا ایک جنگجو جاں بحق جبکہ ایک فرار  ہوا۔مذکورہ جنگجو سی آر پی ایف کا سابق کانسٹیبل تھا، جو نوکری چھوڑ کر پلوامہ میں دکانداری کرتا تھا۔پولیس نے پہلے دعویٰ کیاتھا کہ مذکورہ جنگجو ایک غیر ملکی تھا جو حال ہی میں دیگر ساتھیوں کے ہمراہ دراندازی کر کے وادی میں داخل ہوا تھا اور جو بارودی سرنگ بنانے کا ماہر تھا۔ادھر پانپور میں پولیس نے جنگجوئوں کے ایک بالائی ورکر کو گرفتار کیا ہے ۔
پولیس بیان
پولیس کے مطابق19آر آر ،164سی آر پی ایف اور ایس او جی کوکر ناگ نے ژہ لارنو کوکر ناگ کے نزدیکی جنگلات میں 2سے3جنگجوئوں کی موجود گی کی اطلاع موصول ہونے کے بعدجمعہ اور سنیچر کی درمیانی شب محاصرے میںلیااورسنیچر کی صبح تلاشی کارروائیوں کا آغاز کیا۔پولیس نے بتایا کہ یہاں فورسزکے محاصرے میں آنے والے جنگجوئوں نے محاصرہ توڑنے کی کوشش کرتے ہوئے فورسز پارٹی پرفائرنگ کی ،جس دوران فورسز نے بھی جوابی فائرنگ کی جس کے نتیجے میں ایک جنگجو جاں بحق ہوا ۔پولیس نے بتایا کہ جنگجو کو خود سپرد گی کا موقع دیا گیا تاہم انہوںنے پیشکش ٹھکرا کر اندھا دھند گولیاں چلائیں جس کے ساتھ ہی گولیوں کا تبادلہ ہوا جس میں ایک غیرملکی جنگجو جاں بحق ہوا ۔پولیس نے بتایا مہلوک جنگجولشکرسے وابستہ تھا اور بارودی سرنگ بنانے میں ماہر تھا۔پولیس نے جاں بحق جنگجو کی لاش اپنی تحویل میں لی اور اسکی شناخت ناصرعرف شکیل صاب عرف شکا بھائی ساکن پاکستان کے طور کی ۔تاہم بعد میں مہلوک جنگجو کی شناخت توصیف احمد پنڈت ولد عبدالغنی پنڈت ساکن تلنگام پلوامہ کے بطور ہوئی۔ توصیف احمد گذشتہ ماہ 16ستمبر کو لاپتہ ہوا اور جنگجوئوں کی صف میں شامل ہوا تھا۔پورے 30روز بعد اسکی ہلاکت ہوئی۔توصیف احمد شادی شدہ تھا اور اسکے ہاں 6سال کی بیٹی بھی ہے۔اسکا پلوامہ قصبے میں دکان بھی تھی، جہاں وہ کراکری اور سمرودھی کی چیزیں فروخت کیا کرتا تھا۔معلوم ہوا ہے کہ توصیف 2006میں سی آر پی ایف میں بھرتی ہوا اور اس نے ہمہامہ میں تربیت حاصل کی۔ اسکے بعد وہ 181بٹالین میں تعینات ہوا اور اسکی ڈیوٹی بڈگام میں تھی۔توصیف کی دوسری تعیناتی69بٹالین میں ہوئی اور 2012میں وہ آسام تبدیل ہوا۔اسکے بعد اس نے سی آ پی ایف سے استعفیٰ دیا اور نوکری چھوڑ دی۔گریجویٹ اور آئی ٹی آئی ڈپلومہ ہولڈرتوصیف نے بعد میں جموں کشمیر بینک میں ملازمت اختیار کرنے میں کامیابی حاصل کی، جہاں وہ فورتھ کلاس ملازم کے بطور تعینات رہا، لیکن یہاں بھی نوکری چھوڑ دی اور پلوامہ قصبے کے ثناء کمپلیکس میں دکانداری کرنا لگا۔ادھرپولیس نے بتایا جاں بحق جنگجوکی تحویل سے ایک اے کے47 رائفل، 3میگزین اور باقی قابل اعتراض مواد برآمد کر لیا ۔مقامی لوگوں نے بتایا ہم صبح سویرے گھروں میں ہی تھے جبکہ فورسز نے مذکورہ جنگلاتی علاقے کو محاصرے میں لیا تھا۔ انہوں نے بتایا اس دوران فائرنگ کی آوازیں سنائی دیں اور ساتھ ہی یہاں خاموشی چھا گئی۔بتایا جاتا ہے کہ محاصرے کے دوران ایک جنگجو فرار ہوا۔ ۔ادھرپولیس نے ہفتہ کو دعویٰ کیا کہ انہوں نے پانپور علاقے میں لشکر طیبہ سے وابستہ جنگجو ئوں کے ایک اعانت کارکو گرفتار کرلیا ،جو سرگرم جنگجوئوں کو پناہ دینے اور اْن کے ہتھیار پانپور،کاکہ پورہ اور کھریو علاقوں میں لانے اور لیجانے میں ملوث ہے۔پولیس نے گرفتار شدہ کی شناخت حارث شریف راتھر ساکن زعفران کالونی پانپور کے طور کرتے ہوئے کہا کہ اْس کے قبضے سے قابل اعتراض مواد بر آمد کیا گیا ہے۔پولیس نے کہا کہ اس سلسلے میں پانپور تھانے میںایف آئی آر نمبر84کے تحت کیس درج کرکے تحقیقات شروع کی گئی ہے۔