تازہ ترین

سرکاری اسپتالوں میں مریضوں کی ناقص دیکھ بھال انتظامی بدنظمی کا مظہر:وکرم ملہوترہ | منتخبہ حکومت عوام کے سامنے جوابدہ ہوتی ہے، بیروکریسی نہیں:منجیت سنگھ

تاریخ    12 اکتوبر 2020 (30 : 12 AM)   


نیوز ڈیسک
جموں//صوبہ جموں میں صحت خدمات کی بگڑتی صورتحال پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے اپنی پارٹی نے کویڈ صورتحال سے نپٹنے میں سرکاری اسپتالوں کی ناکامی کے لئے ذمہ دار حکام کیخلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔ یہاں منعقدہ ایک پروگرام میں پارٹی جنرل سیکریٹری وکرم ملہوترہ نے کہاکہ صوبہ جموں میں ضلع وسب ضلع اسپتال کورونا سے پیداشدہ صورتحال سے نپٹنے میں مکمل طور ناکام رہے ہیں جس کی وجہ سے بیشتر لوگ گورنمنٹ میڈیکل کالج جموں یا ملک کی دیگر ریاستوں کو جانے کو ترجیحی دے رہے ہیں۔ بخشی نگر اسپتال جموں میں بہت زیادہ بھیڑ ہے جومریضوں کو ہینڈل نہیں کرپارہا، سبھی متاثرہ مریضوں کو وینٹی لیٹرز دستیاب نہیں ہوپارہے ، آکسیجن سپلائی بھی نہ ہونے کے الزامات ہیں۔ ملہوترہ نے کہاکہ جموں وکشمیر کے پاس بہتر صحت حفظان نظام ہے لیکن بدنظمی کی وجہ سے صورتحال بدترہوئی ہے۔انہوں نے کہاکہ ککریال میں موجود اسپتال صرف وی آئی آئی پیز کا علاج ومعالجہ کرتا ہے جبکہ عام آدمی کو نظر انداز کیاجارہاہے۔ .یہ حکومت کی ذمہ داری بنتی ہے کہ ایسے اسپتالوں کے خلاف کارروائی کی جائے جوکہ کویڈمریضوں کوعلاج ومعالجہ فراہم کرنے سے انکار کررہے ہیں۔ملہوترہ نے حکومت سے اپیل کی ہے کہ اسپتال انتظامیہ کے خلاف وی آئی آئی پی کلچر کو فروغ دینے کے لئے کارروائی کی جائے جہاں عام آدمی کو طبی سہولیات فراہم کرنے سے انکار کیاجارہاہے۔ دریں اثناء انہوں نے رانی پیلس ستواری میں پارٹی لیڈر گورو کپوار کی طرف سے منعقدہ ’یوتھ کنونشن‘سے خطاب کرتے ہوئے نوجوانوں سے اپیل کی کہ وہ پارٹی کو مضبوط کریں۔ اس موقع پر صوبائی صدر منجیت سنگھ نے کہاکہ منتخبہ حکومت کی عدم موجودگی میں نوجوانوں نے اپنی پارٹی میں ایک اُمید پیدا کی ہے۔ کثیر تعداد میں صوبہ جموں سے تعلیم یافتہ نوجوانوں کی شمولیت خوش آئند ہے جوکہ کھوکھے نعرؤں اور نوکریاں نہ ملنے کی وجہ سے سابقہ حکومتوں سے دھوکہ کھاچکے ہیں۔ لوگ موجودہ انتظامی نظام میں نوجوانوں کے مستقبل کو لیکر فکر مند ہیں، جہاں حکام اُن کی سن کر راضی نہیں۔ منجیت سنگھ نے کہاکہ انتظامیہ عوام خاص طور سے نوجوانوں کے مسائل حل کرنے میں ناکام رہی ہے۔ 5اگست 2019کے بعدصورتحال بد سے بدتر ہوتی جارہی ہے، حکومت لوگوں کا اعتماد جیتنے میں مکمل طور ناکام رہی ہے، صرف ریاستی درجہ ہی نہیں چھینا گیا بلکہ لوگوں کو ہرمحاذ پر پریشان کیاجارہاہے۔ اس موقع پر سابقہ ایم ایل اے فقیر ناتھ، او بی سی ریاستی کارڈی نیٹر مدن لال چلوترہ، اعجاز کاظمی، شبیر کوہلی، راج کمار للوترہ، جوگیندر سنگھ، جے پی سنگھ، جنمیت سنگھ بالی، یاسر چوہدری، رقیق احمد خان، جگدیش راج پانڈے اور شنکر سنگھ چب بھی موجود تھے۔