تازہ ترین

سرینگرسمارٹ سٹی پروجیکٹ | تاریخی اہمیت کی حامل عمارتوں کی تزئین و آرائش کا کام جاری

تاریخ    3 اکتوبر 2020 (00 : 02 AM)   


نیوز ڈیسک
سرینگر// کوویڈ 19 وباء کے باوجود بھی سرینگر سمارٹ پروجیکٹ کے تحت شہر سرینگر میں تاریخی اہمیت کی حامل عمارتوں کی تزئین و آرائش اور بحالی کا کام جاری ہے ۔انتظامیہ نے شہرسرینگر میں دریائے جہلم کے کنارے واقع 19 ویں صدی کے چرچ کی تزئین و آرائش کیہے جبکہ خانقاہ معلی اور خانقاہ نقشبند صاحب جیسی زیارت گاہوں کیتحفظ اور ورثہ کے احیاء کے ایک پروگرام کے تحت شروع کیا گیا ہے۔اس کے ساتھ ساتھ آثار شریف درگاہ حضرت بل کی تزئین اور اس کی بحالی کے حوالے سے بھی ایک پلان مرتب کیا گیا ہے جبکہ تاریخی جامع مسجد کے تحفظ اور خوبصورتی کے منصوبے کو بھی حتمی شکل دی گئی ہے ۔سرینگر انتظامیہ کے مطابق فتح کدل میں دریائے جہلم پر واقع رگھو ناتھ مندر کی تجدید و مرمت کا کام ایک ماہ قبل شروع کیا گیا تھا اور امکان ہے کہ دسمبر کے آخر تک یہ کام مکمل ہوجائے گا۔شنکراچاریہ پہاڑی کے دامن میںسینٹ لیوک چرچ ، جو 1896 میں دو نامور ڈاکٹروں ڈاکٹر ارنسٹ اور ڈاکٹر آرتھر نیوی نے قائم کیا تھا ، کو بھی بحال کیا جا رہا ہے۔پائین شہرکے حسن آباد کے علاقے میں امام بارہ کے تحفظ کے لئے ایک منصوبہ بھی شروع کیا گیا۔ سرینگر بارہمولہ روڈ پر گرودوارہ جسے سکھبرادری کی رضامندی سے شاہراہ سے اٹھا کر قریبی جگہ پر تعمیر کیا گیا ،سے شاہراہ کو وسیع کرنے کی راہ ہموار ہوگئی۔سمارٹ سٹی پروجیکٹ کے تحت شہر میں قدیم عمارتوں اور تایخی مذہبی مقامات کے غیر محفوظ حصوں کو ہٹا کر انہیںنئے سرے سے تعمیر کرنا ہے ۔
 

تازہ ترین