تازہ ترین

اشوک کول کے بیان پر لیہہ میں ناراضگی

تاریخ    25 ستمبر 2020 (00 : 02 AM)   


یو این آئی
لیہہ// لداخ یونین ٹریٹری کے ضلع لیہہ میں مرچنٹ ایسوسی ایشن لیہہ کی کال پر جمعرات کو بی جے پی جموں و کشمیر یونٹ کے جنرل سکریٹری اشوک کول کے بیان کے خلاف نصف روزہ ہڑتال رہی اور لوگوں نے احتجاج بھی کیا۔واضح رہے کہ ضلع لیہہ کی مذہبی، سیاسی، سماجی اور طلبہ تنظیموں پر مشتمل اپیکس باڈی نے منگل کو ایک غیر معمولی اجلاس کے بعد چھٹے شیڈول کے تحت آئینی تحفظات فراہم کئے جانے تک لداخ خودمختار پہاڑی ترقیاتی کونسل لیہہ کے اعلان شدہ انتخابات کا بائیکاٹ کرنے کا اعلان کیا۔بی جے پی لیڈر اشوک کول نے انتخابات کے بائیکاٹ کے اس اعلان پر اپنے ردعمل دیتے ہوئے کہا تھا’’قرارداد منظور کرنے سے کیا ہوگا؟ یہ سب بکواس ہے، ہم بہت جلد لداخ جا کر وہاں اپنے لوگوں سے بات کریں گے‘‘۔موصولہ اطلاعات کے مطابق مرچنٹ ایسوسی ایش لیہہ کی کال پر لیہہ میں جمعرات کو نصف روزہ ہڑتال رہی جس دوران لیہہ مارکیٹ سمیت باقی بازاروں میں بھی دکانیں بند رہیں۔ہڑتال کے ساتھ ساتھ کئی مقامات پر لوگوں نے احتجاجی مظاہرے بھی کئے اور موصوف بی جے پی لیڈر کو بیان واپس لینے کا مطالبہ بھی کیا۔ اس ہڑتال کال کو خطے کی تمام سیاسی، مذہبی و سماجی تنظیموں کی حمایت حاصل رہی۔ایک مقامی شہری نے کہا کہ اس ہڑتال سے ہمارا چھٹے شیڈول کے اطلاق کا مطالبہ مزید مستحکم ہوا ہے۔کانگریس کمیٹی ضلع لیہہ نے بھی اپنے ایک بیان میں اشوک کول کے بیان کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں اپنا بیان واپس لے کر لداخی عوام سے غیر مشروط معافی مانگنی چاہئے۔اپیکس باڈی نے اشوک کول کا بیان سامنے آنے کے بعد بی جے پی پر لوگوں کی یکجہتی کو نقصان پہنچانے کی سازش کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔اپیکس باڈی نے اشوک کول کے بیان پر شدید ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے موصوف سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اپنے بیان پر لداخ کے لوگوں سے معافی مانگیں۔