پہاڑی ترقیاتی کونسل کے انتخابات کے بائیکاٹ کا معاملہ

رام مادھو ہنگامی دورے پر لیہہ پہنچے ،مقامی پارٹی لیڈران سے بات چیت شروع

تاریخ    25 ستمبر 2020 (00 : 02 AM)   


یو این آئی
لیہہ//بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے قومی جنرل سکریٹری رام مادھو بھی ہنگامی دورے پر لیہہ پہنچ گئے ہیں۔ قبل ازیں بی جے پی جموں و کشمیر یونٹ کے جنرل سکریٹری اور لداخ امور کے انچارج اشوک کول بدھ کو ہنگامی دورے پر لیہہ پہنچے اور وہیں خیمہ زن ہوگئے۔ واضح رہے کہ ضلع لیہہ کی مذہبی، سیاسی، سماجی اور طلبہ تنظیموں پر مشتمل اپیکس باڈی نے منگل کو ایک غیر معمولی اجلاس کے بعد چھٹے شیڈول کے تحت آئینی تحفظات فراہم کئے جانے تک لداخ خودمختار پہاڑی ترقیاتی کونسل لیہہ کے اعلان شدہ انتخابات کا بائیکاٹ کرنے کا اعلان کیا۔ اپیکس باڈی میں بی جے پی کے لیڈران بھی شامل ہیں جس کی وجہ سے پارٹی کیلئے مشکلیں پیدا ہوگئی ہیں۔ جمعرات کو لیہہ پہنچنے والے رام مادھو سے جب نامہ نگاروں نے پوچھا کہ کیا ان کی جماعت کے لیڈران کاغذات نامزدگی داخل کریں گے تو ان کا جواب تھا’’پارٹی کے تمام لیڈران سے ہماری بات چیت ہوگی، آپ کو پارٹی کے فیصلے سے آگاہ کیا جائے گا‘‘۔ جب ایک نامہ نگار نے موصوف سے پوچھا کہ چھٹے شیڈول کے تحت آئینی تحفظات کی فراہمی کے حوالے سے بی جے پی کا کیا موقف ہے، تو ان کا جواب تھا’’جو بھی فیصلہ ہوگا آپ کو اس کی جانکاری دی جائے گی‘‘۔اس دوران رام مادھو نے اپنے ایک ٹوئٹ میں کہا’’میں لیہہ میں ہوں،ضلعی خودمختار کونسل کیلئے ہونے والے انتخابات پر پارٹی لیڈران اور کونلسروں سے بات چیت کی۔ 2015 کے انتخابات میں بی جے پی نے 26 میں سے 18 نشستوں پر جیت درج کی تھی۔ ہم نے لداخ کے لوگوں کی یونین ٹریٹری کی دیرینہ مانگ پوری کی ہے۔ اس کے تناظر میں ہمیں انتخابات میں مزید بہتر کارکردگی کی توقع ہے‘‘۔بی جے پی لیڈر اشوک کول نے گزشتہ روز انتخابات کے بائیکاٹ کے اعلان پر اپنا ردعمل طاہر کرتے ہوئے کہا تھا ’’قرارداد منظور کرنے سے کیا ہوگا؟ یہ سب بکواس ہے ’ہم بہت جلد لداخ جا کر وہاں اپنے لوگوں سے بات کریں گے‘‘۔ کول کے اس بیان سے لیہہ کے لوگ کافی ناراض ہوگئے ہیں۔ موصوف جب بدھ کو ہنگامی دورے پر لیہہ پہنچے تو انہیں یہاں احتجاجی مظاہروں کا سامنا کرنا پڑا۔
 

تازہ ترین