تازہ ترین

تاجر،سیاسی وفوداورسابق وزراء وارکان قانون سازیہ لیفٹینٹ گورنرسے ملاقی | کاروباراور تجارت کی بحالی کے اقتصادی پیکیج کیلئے شکرگزار

تاریخ    23 ستمبر 2020 (00 : 02 AM)   


نیوز ڈیسک
جموں //تاجر برادری کے ارکان بشمول کنفیڈریشن آف انڈین انڈسٹری اور آل انڈیا بیوپار منڈل فیڈریشن نے آج  یہاںلفٹینٹ گورنر منوج سنہا سے ملاقات کی اور تاجر طبقے کو تجارت کی بحالی کیلئے اقتصادی پیکیج کے ذریعے امداد فراہم کرنے کیلئے حکومت کاشکریہ ادا کیا ۔ کنفیڈریشن آف انڈین انڈسٹری کا وفد فاروق امین کی قیادت میں لفٹینٹ گورنر سے ملا اور تجارتی شعبے کیلئے 1350 کروڑ روپے کے امدادی پیکیج کیلئے اُن کا شکریہ ادا کیا ۔ وفد نے پیکیج کو ایک اچھی شروعات قرار دیتے ہوئے امید ظاہر کی کہ اس سے جموں کشمیر میں ترقی کی رفتار میں مثالی تبدیلی لانے میں مدد ملے گی ۔ سی آئی آئی کے وفد نے اس موقعہ پر اپنے چند مسائل بھی پیش کئے جن میں جموں کشمیر میں ایم ایس ایم ای یونٹوں کے حق میں التوا میں پڑی سرکاری واجبات واگذار کرنے ، سی آئی آئی انسٹی چیوٹ آف ہاسپٹیلٹی اور ملازمت اور روزگار کیلئے صنعتی قیادت والے سہولتی سیل کے قیام کے مطالبات پیش کئے ۔ فیڈریشن آف آل انڈیا بیوپار منڈل کے ارکان نے صدر سنجے بنسل کی قیادت میں لفٹینٹ گورنر سے ملاقات کی اور انہیں جموں کشمیر کیلئے 1350 کروڑ روپے کے اقتصادی پیکیج کے اعلان کیلئے اُن کا شکریہ ادا کیا ۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ پیکیج سے کووڈ 19 وباء کے بحران کے سبب تجارت کو ہوئے نقصان کی بھرپائی میں مدد ملے گی ۔ انہوں نے مستقبل میں بھی حکومت کو اپنے بھر پور تعاون کا یقین دلایا ۔ لفٹینٹ گورنر نے کہا کہ ترقی کا مقصد تمام بہبودی شعبوں پر غور کئے بغیر حاصل نہیں کیا جا سکتا ۔ انہوں نے کہا کہ یو ٹی حکومت جموں کشمیر میں تاجر طبقے کو درپیش مسائل سے آگاہ ہے اور امدادی و بحالی پیکیج کا اعلان جموں کشمیر میں تجارتی شعبے کی مشکلات ، مالی اور دیگر مسائل حل کرنا ہے تا کہ تاجروں اور صنعتکاروں کو لازمی مدد فراہم کی جا سکے ۔ لفٹینٹ گورنر نے وفود کے ارکان کو یقین دلایا کہ اُن کی جانب سے اٹھائے گئے معاملات پر غور کیا جائے گا ۔ادھرجموں میں عوام تک پہنچنے کے پروگرام کو جاری رکھتے ہوئے لفٹینٹ گورنر منوج سنہا سابق وزراء ، سابق قانون سازوں ، سیاسی قائدین اور عوامی وفود سے راج بھون جموں میں ملے اور انہیں درپیش مسایل اور شکایات سے آگاہی حاصل کی ۔ بی جے پی قائدین کا وفد رویندر رینہ کی قیادت میں ایل جی سے ملا ۔  وفد نے یو ٹی میں کووڈ 19 صورتحال پر غور و خوض کیا ۔ سابق وزیر سنیل شرما بھی ایل جی سے ملے اور کشتواڑ ضلع کیلئے ائیر سٹرپ کیلئے اُن کا شکریہ ادا کیا ۔ سابق وزیر بالی بھگت اور سینئر صحافی دیا ساگر نے حقِ شہریت سند کیلئے اہلیت اور دیگر قواعد سے متعلق وضاحت طلب کی ۔ سابق ایم ایل سی چرن جیت سنگھ خالصہ نے مانگوں کی یاداشت پیش کی ۔ جموں کشمیر کے سکھ نوجوانوں کے وفد نے وریندر سنگھ سونو کی قیادت میں مانگوں کی یاداشت پیش کی  ۔ دریں اثنا صدر جموں کشمیر گجر بکروال فیڈریشن نے شوکت گُجر نے لفٹینٹ گورنر سے ملاقات کی اور گجر بکروال طبقے کو درپیش مسائل سے اُنہیں آگاہ کیا ۔ لفٹینٹ گورنر نے وفود کو یقین دلایا کہ اُن کی جائیز مانگوں اور مسائل کا بغور جائیزہ لیکر اُن کا مرحلہ وار حل یقینی بنایا جائے گا ۔ انہوں نے سابق وزراء ، سابق ایم ایل سیز اور سیاسی قایدین کو عوام کی فلاح و بہبود کیلئے اپنی کوششیں جاری رکھنے کیلئے کہا ۔