حضرت بابا دائود خاکی ؒ کا عرس | کوہ ماران پر آستان عالیہ میں مجالس آراستہ

تاریخ    22 ستمبر 2020 (00 : 02 AM)   


یو این آئی
سرینگر//وادی میںکل بلند پایہ ولی کامل علامہ حضرت بابا داؤد خاکیؒ کا 448واں عرس مبارک نہایت عقیدت واحترام کے ساتھ منایا گیا۔ اِس سلسلے میں سب سے بڑی تقریب اُن کے آستان عالیہ واقع کوہ ماران (زیارت حضرت محبوب العالم شیخ حمزہ مخدومؒ) پر منعقد ہوئی جہاں صبح سویرے ہی قرآن خوانی، ختمات المعظمات، دورد ازکار اور نعت منقبت کی روح پرور مجلس آراستہ ہوئی۔ جس کی پیشوائی بقعہ عالیہ کے ختم خواں پیرزادہ الحاج عبدالمجید مخدومی نے کی۔ وادی کے اطراف و اکناف سے آئے ہوئے عقیدتمدوں نے اس بابرکت اور روح پرور مجلس میں شرکت کی۔ اس موقعے پر حضرت بابا داود خاکیؒ کے علمی اور روحامی کمالات پر بھی روشنی ڈالی گئی۔ تقریب پر مولانا شوکت حسین کینگ، امام حی بقعہ الحاج پیر علی محمد مخدومی ، امام الحاج پیر شبیر احمد مخدومی، پیرزادہ محمد یوسف مخدومی، الحاج شفاعت احمد کاملی اور مخدوم ٹرسٹ کے چیئرمین شاہد جیلانی مخدومی کے ساتھ ساتھ بقعہ عالیہ کے خدامان حضرات بھی موجود تھے۔اس دوران حضرت شیخ سید شاہ ناصر الدین بنگالیؒ(سہروردی) کے عرس کے سلسلے میں اُن کے آستانِ عالیہ واقع سعدہ کدل میں صبح سویرے ہی قرآن خوانی، درود ازکار اور مولود خوانی کی مجلس آراستہ ہوئی اور مولود خوانی کی مجلس آراستہ ہوئی۔ تقریب کی صدارت الحاج قدیمی صاحب اور صدرِ انتظامیہ کمیٹی الحاج مشتاق احمد بغدادی نے انجام دی۔ تقریب پر درگاہ حضرت بل کے مؤزن اور نعت خواں حاجی گلزار احمد ہمدانی ، جمعیت کے میر غلام محمد ساقی اور مجلس کی پیشوائی الحاج پیر منظور احمد نوشہری نے کی۔مجالس کے دوران کووڈ 19سے نجات پانے کیلئے توبہ استغفار کی مجالس اور خصوصی دعائوں کا اہتمام بھی کیا گیا۔
 
 

حقانی میموریل ٹرسٹ کی آن لائین کانفرنس | علماء اور دانشوروں کی طرف سے گلہائے عقیدت پیش 

سری نگر//حضرت بابا داود خاکیؒ  کے عرس شریف پر انہیں گلہائے عقیدت پیش کرنے  کے سلسلے  میں حقانی میموریل ٹرسٹ جموں و کشمیر نے منفرد آن لائین کانفرنس کا انعقاد کیا۔جس میں کئی علما اور دانشوروں نے شرکت کی ۔کانفرنس کی صدارت مولانا شوکت حسین کینگ نے کی ۔ٹرسٹ کے سرپرست اعلی سیدحمید اللہ حقانی نے افتتاحی کلمات میں کہا کہ علمی عظمت کی وجہ سے حضرت خاکیؒکو امام اعظم  ثانی کے خطاب  سے یاد کیے جاتے ہیں ۔انجمن مصباح الاسلام کے سربراہ مولانا مبارک حسین نعمانی نے حضرت خاکیؒ کی علمی وسعت اور گہرئی کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ آپ ؒ علوم کے سمندر تھے انکی تصانیف خصوصاً ورد المریدین میں انہوں نے عقائد اور تصوف کے  جملہ مسائل بیان فرماے ہیں۔سید  بلال کرمانی نے حضرت بابا داود خاکیؒ کے کارناموں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے کشمیر کے طول و عرض میں توہمات و بدعات کا قلع قمع کرنے میں حضرت شیخ حمزہ مخدوم کی معاونت کی۔ نامور مصنف انجیر نذیر احمدپانپوری نے اپنے خطاب میںکہا کہ آپ عظیم المرتبت عالم دین ہونے کے علاوہ کشمیر کے قاضی القضاء یعنی چیف جسٹس تھے ایسے منصبوں اور ظاہری شان و شوکت اور دولت و مرتب ظاہرکو خیر باد کرکے حضرت سلطان العارفین کی صحبت اختیار کرنا اس بات کی دلالت ہے عہد وسطی کے عالموں میں راہ حق کی جستجو اور تڑپ کس درجہ ہوتی تھی۔ ٹرسٹ کے جنرل سیکرٹری بشیر احمد ڈار نے  "دربار سلطان سے کوہ ماران تک" حضرت خاکیؒ پر  ایک انگریزی مقالہ پیش کیا۔حقانی میموریل ٹرسٹ سے وابستہ اداروں تحریک اسلامی جموں و کشمیر، ابن حقانی یوتھ فاونڈیشن ،دارلعلوم حقانیہ سویہ بگ ، دارلعلوم قریشیہ شیری بارہمولہ دارلعلوم سلطان العارفین ترچھل پلوامہ ، دارلعلوم شاہ ولی اللہ ست بونن کپوارہ  اور دارلعلوم لبیک یا رسول اللہؐ سوپور کے منتظمین ، اساتذہ اور طلبا نے بھی اس کانفرنس میں شرکت کی اور حضرت خاکی کی شان میں گلہائے عقیدت پیش کیے ہیں۔
 

تازہ ترین