ہند چین سرحد پر کوئی دراندازی نہیں ہوئی

۔3برسوں میں 582جنگجو، 76فورسز اہلکار ہلاک: ریڈی

تاریخ    17 ستمبر 2020 (00 : 02 AM)   


نیوز ڈیسک
نئی دہلی//مرکزی وزرات داخلہ نے کہا ہے کہ گزشتہ چھ ماہ کے دوران ہند چین سرحد پر دراندازی کا کوئی بھی واقعہ پیش نہیں آیا تاہم اس دوران ہند پاک سرحد پر دراندازی کے47 واقعات پیش آئے ۔انہو ں نے کہا کہ جموں کشمیر کی خصوصی پوزیشن کے خاتمہ کے بعد عسکری کارروائیوں میں کافی کمی ریکارڈ کی گئی ۔ راجیہ سبھا میں ایک تحریری سوال کے جواب میں مرکزی وزارت داخلہ نے کہا کہ گزشتہ تین برسوںمیں پاکستان سے لگنے والی سرحدو ں پر 594دراندازی کی کوششیں ہوئیں جن میں سے 312کامیاب بھی ہوئیں ۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ چھ ماہ کے دوران ہند چین سرحد پر ایسا کوئی واقعہ پیش نہیں آیا ۔ مرکزی وزیر مملکت برائے داخلہ جی کشن ریڈی نے کہا کہ جموںکشمیر میں گزشتہ تین برسوں کے دوران 582جنگجوئوں کو ہلاک جبکہ 46کو  گرفتار کیا گیا ۔ انہوںنے کہا کہ سال 2018سے امسال ستمبر تک 76فورسز اہلکار بھی مختلف تشدد آمیز واقعات میں مارے گئے ۔ ریڈی نے کہا کہ جموں کشمیر میں گزشتہ سال جب سے دفعہ370کا خاتمہ کیا گیا عسکری سرگرمیوں میںکافی کمی آئی ہے جبکہ جموںکشمیر کو یو ٹی میں تبدیل کرنے کے بعد سرحدوں پر بھی ماحول اب کچھ پر امن دیکھنے کو ملا رہا ہے ۔ ریڈی نے کہا کہ جموں کشمیر میں عسکری سرگرمیوں میں کافی کمی ریکارڈ کی گئی ہے اور مقامی نوجوانوں کی جانب سے بھی عسکری صفوں میں شمولیت کا رجحان بھی کم ہو گیا ہے ۔ 

تازہ ترین